March 6, 2019 at 1:34 pm

افغان صوبے ننگر ہار کے شہر جلال آباد میں خود کش حملہ میں 3 افراد جاں بحق جب کہ 6 زخمی ہو گئے۔غیر ملکی خبر رساں ایجنسی کے مطابق جلال آباد میں 2 خود کش حملہ آوروں نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ جس کی وجہ سے کمپنی کے 3 ملازمین جاں بحق جب کہ 6 شہری زخمی ہو گئے۔ترجمان گورنر ننگر ہار کے مطابق خودکش بمبار نے سٹی ائرپورٹ کے نزدیک کنسٹرکشن کمپنی کے پاس خود کو دھماکہ خیز مواد سے اُڑایا اور دھماکے کے بعد سیکیورٹی فورسز اور دہشت گردوں میں فائرنگ کا تبادلہ ہوا۔فوری طور پر خود کش حملے کی ذمہ داری کسی نے قبول نہیں کی۔چند روز قبل یکم مارچ کو افغانستان کے صوبہ ہلمند میں طالبان نے ایک فوجی بیس پر 48 گھنٹوں کے دوران 3 حملے کیے تھے جس میں 48 افغان فوجی مارے گئے جب کہ جوابی کارروائی میں متعدد حملہ آور بھی مارے گئے تھے۔یہ حملہ اس وقت ہوا تھا جب ایک روز بعد طالبان اور امریکہ کے درمیان مذاکرات دوبارہ شروع ہونے جارہے تھے۔افغانستان میں امریکہ کے 14 ہزار فوجی موجود ہیں جب کہ انسداد دہشت گردی کے لیے امریکہ کا ایک الگ مشن بھی جاری ہے۔38 ممالک کے 8ہزار فوجی بھی افغان فوج کو تربیت فراہم کررہے ہیں۔اس سے قبل گزشتہ سال جولائی میں دہشت گردوں کی جانب سے سرکاری عمارت کو نشانہ بنایا گیا تھا اور حملے میں 15 افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ افغان سیکیورٹی فورسز 5 گھنٹے کی طویل لڑائی کے بعد سرکاری عمارت کو کلیئر کرانے میں کامیاب ہوئی تھی جب کہ تینوں حملہ آور مارے گئے تھے۔ملزمان کے حملے میں 15 افراد زخمی بھی ہوئے تھے۔سرکاری عمارت پر حملہ کی ذمہ داری کسی گروپ نے قبول نہیں کی تھی جب کہ طالبان کی جانب سے مذکورہ حملے سے لاتعلقی کا اعلان کیا تھا

Facebook Comments