March 4, 2019 at 8:53 pm

کراچی میں ماڈل رباب ہانی زیدی کے قتل کو گیارہ روز گزرنے کے بعد بھی پولیس قاتل تک نہیں پہنچ سکی، گھروالوں نے ہانی زیدی کے دوست عمر کو مبینہ ملزم قرار دے دیا۔گیارہ فروری کو اومان سے واپس کراچی آنیوالی ماڈل گرل رباب ہانی زیدی کی لاش22فروری کو موچکو سے ملی، پولیس نے زیادہ منشیات کے استعمال کو موت کی وجہ بتائی ہے لیکن مقتولہ کے گھر والے ماننے کو تیارنہیں ہیں اہلخانہ نے ہانی زیدی کے دوست عمر کو مبینہ ملزم قراردیا۔
دوسری جانب ماڈل گرل رباب ہانی زیدی کی والدہ نے تردید کردی کہ میری بیٹی منشیات استعمال نہیں کرتی تھی، والدہ کا کہنا ہے کہ ہانی کی کسی سے دشمنی نہیں تھی، پولیس کو سب بتادیا لیکن اب تک قاتل کو نہیں پکڑا گیا۔مقتولہ کی بہن کا کہنا تھا کہ میں قاتل کو جانتی ہوں وہ عمر کیساتھ بلیو رنگ کی گاڑی میں گئی تھی ، عمر اسکا بہت قریبی دوست تھا لیکن جنازے میں نہیں آیا۔ہانی زیدی کی بہن نے سما کو بتایا کہ بدھ کی شام ماڈل گرل شاپنگ کیلیے گئی تھی لیکن واپس نہ لوٹی عمرکی بہن ثناء نے فون کرکے بتایا کہ ہانی کی طبعیت خراب ہوگئی ہے

Facebook Comments