ہیلتھ کارڈ پر لاہور کے سرکاری اسپتالوں میں سہولتوں کا فقدان

شیئر کریں:

لاہور سے اجلال زیدی

ہیلتھ کارڈ کا تذکرہ زبان زدِ عام مگر سرکاری ہسپتالوں میں تاحال سہولیات کا فقدان دیکھائی دیتا ہے۔ مریض اور لواحقین لاہور کےہسپتالوں میں علاج کے لئے رل گئے۔کسی کو مریض داخل کروانے میں مشکلات تو کوئی دوائی نا ملنے پر خوار ہورہا ہے۔
لاہور کے سرکاری ہسپتال میں ہیلتھ کارڈ کے باوجود مریضوں کی مشکلات کم نہ ہو سکی۔صوبائی وزیر صحت کے مفت علاج کے نعرے بھی کھوکھلے ثابت ہونے لگے۔
صوبائی وزیر صحت کا نعرہ ہے کہ دس لاکھ تک ہر شہری مفت علاج کروا سکے گا لیکن اس بات میں حقیقت کب عیاں ھو گی عوام جیسے تبدیلی کا تھوڑا صبر کر رہے ہیں وہاں حکومت کی جانب سے کھیلا جانے والا کارڈ کے بعد صحت کارڈ کا انتظار ھے ۔ دوسری جانب مریض کہتے ہسپتال انتظامیہ کارڈ کے ذریعے پروٹوکول دینے سے قاصر ہے۔ہسپتال انتظامیہ کہتی کارڈ پر علاج نہی کر سکتے ابھی پروٹوکول میں نہیں ھے۔
مریض کہتے ہیں سرکاری اسپتالوں میں سہولیات کا فقدان ہے نہ ہسپتالوں میں دوائی فری مل رہی ہے اور ٹیسٹ بھی نجی لیبارٹریز سے کروانے پڑتے ہیں۔
محکمہ صحت نے شہریوں کوہیلتھ کارڈ جاری کردیا مگر سرکاری ہسپتالوں میں بہتر علاج کی سہولت کب میسر ہو گی یہ راز پوشیدہ ہے۔ سرکاری اسپتالوں کا اربوں کا بجٹ اخر جاتا کہاں ہے مریض پریشان ہیں۔


شیئر کریں: