گلگت بلتستان میں وفاقی وزرا اور حکومتی شخصیات کو پروٹوکول نہیں دیا جائےگا

شیئر کریں:

گلگت بلتستان میں وفاقی وزیر کو کسی بھی قسم کا سرکاری پروٹوکول نہ دینے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔
ریٹرننگ افیسر دیامر نے نوٹیفکیشن جاری کیا ہے کہ وفاقی وزیر علی امین گنڈا پور کو کسی بھی قسم
کا سرکاری پروٹوکول نہ دیا جائے۔

وفاقی وزیر کسی بھی انتخابی مہم میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔
چیف الیکشن کمشنر گلگت بلتستان کی ہدایات کے عین مطابق ریٹرننگ افیسر نے نوٹیفکیشن جاری کیا ہے۔

الیکشن کمیشن گلگت بلتستان نے سیاسی جماعتوں کے قائدین کو خبردار کردیا

الیکشن قوانین کے مطابق پیرا نمبر 18 میں اس نوٹیفکیشن کے بارے میں بتایا گیا ہے: – “صدر ، وزیر اعظم
چیئرمین / ڈپٹی چیئرمین سینیٹ ، اسپیکر / ڈپٹی اسپیکر ایک اسمبلی ، وفاقی وزرا ، وزراء ریاست ، گورنرز
وزرائے اعلیٰ ، صوبائی وزراء وزیراعظم کے مشیر اور وزرائے اعلیٰ ، میئرز / چیئرمین / ناظم ، ان کے نائبین اور
دیگر عوامی عہدیدار کسی بھی طرح انتخابی مہم میں حصہ نہیں لیں گے۔

یہ شق بھی لاگو ہوگی کیئر ٹیکر سیٹ اپ کے سلسلے میں سرکلر نے “دستخط کے نوٹس میں لایا ہے کہ وزیر
امور کشمیر وگلگت بلتستان کے وفاقی وزیر علی امین گنڈا پور نے ضلعی دیامر کا دورہ طے کیا ہے۔

گلگت بلتستان اسمبلی کے لئے غیر جانبدار انتخابات کا آغاز ہوچکا ہے اور موجودہ وزیر برائے وفاقی وزیر کا
دورہ حلقہ جی بی اے 16 دیامر II میں عام طور پر اور خاص طور پر ضلع دیامر میں انتخابی عمل پر اثر انداز
ہوسکتا ہے۔

چیف الیکشن کمشنر کے مطلع کردہ ضابطہ اخلاق کے مطابق ضلعی دیامر کی ضلعی انتظامیہ علی امین گنڈا پور
کو کسی بھی سرکاری / وی آئی پی پروٹوکول دینے سے روکتی ہے۔

وزیر انتخابی مہم میں حصہ لینے سے روکتے ہیں کسی بھی طرح سے اس سرکلر کی خلاف ورزی کو ضابطہ
اخلاق کی خلاف ورزی قرار دیا جائے گا۔


شیئر کریں: