کورونا کا علاج تلاش کرنے پر پاکستانی ڈاکٹر دنیا کے بہترین میڈیکل سائنسدان کے ایوارڈ کیلیے نامزد

شیئر کریں:

پاکستانی ڈاکٹر نے وطن کا نام روشن کردیا۔
جو دنیا کے بڑے بڑے ممالک کے ڈاکٹر نہ کر پائے وہ پاکستانی ڈاکٹر نے کردیکھایا۔
پاکستان سے تعلق رکھنے والے پروفیسر ڈاکٹر جان اسلم کو دنیا کے
بہترین میڈیکل سائنس دان کے ایوارڈ کے لیے نامزد کردیا گیا۔
ڈاکٹر جان کو سال 2018, 2019 اور 2020 کے لیے بہترین طبی سائنس دان کے ایوارڈ کے لیے نامزد کیا گیا ہے۔

پاکستان کے سپوت ڈاکٹر جان اسلم نے کورونا وائرس کا موثر ترین علاج دریافت کیا ہے
جس بنا پر انہیں اس عالمی ایوارڈ کے لیے نامزد کیا گیا۔
پاکستان سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر جان روس میں میڈیکل کے شعبے میں خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔
اس سے پہلے ڈاکٹر جان جان اسلم کو ان کی خدمات کی بنا پر روس میں نوبل پرائز بھی دیا جاچکا ہے۔
ڈاکٹر جان کی کورونا کے علاج کے لیے بنائی گئی دوا
پاکستان میں رجسٹرڈ ہے اور اس دوا سے دنیا بھر میں لاکھوں افراد صحت یاب ہوئے ہیں۔

پروفیسر ڈاکٹر جان اسلم ماسکو کی اکیڈمی آف میڈکل اینڈ ٹیکنکل سائنسز کے نائب صدر ہیں۔
ڈاکٹر جان اسلم نے کورونا کے علاج کو دریافت اور میڈیکل سائنسز میں نئی ایجادات کرکے ثابت کردیا ہے پاکستان میں انتہائی ذہین لوگ موجود ہیں۔
اگر حکومت پاکستانی نوجوانوں، دانشوروں، سائنس دانوں اور
ڈاکٹروں کو سہولیات فراہم کرے تو وطن عزیر تمام شعبوں میں دنیا کی امامت کرسکتا ہے۔


شیئر کریں: