کورونا ویکسین تیار، دوا ساز کمپنی نے لوگوں تک فراہمی کی اجازت مانگ لی

شیئر کریں:

امریکی دوا ساز کمپنی موڈرنا نے اپنی کورونا ویکسین کو استعمال
کرنے کےلیے امریکا اور یورپ میں ہنگامی منظوری درخواست دے دی۔
موڈرنا کی درخواست پر امریکا اور یورپی یونین کے حکام ابتدائی آزمائشی مراحل کے
بعد فیصلہ کریں گے کہ ویکسین ہنگامی استعمال کے لیے محفوظ اور مؤثر ہے یا نہیں۔

دوسری جانب موڈرنا نے دعویٰ کیا ہےکہ ان کی تیار کردہ ویکسین
لوگوں کو کووڈ-19 سے محفوظ رکھنے میں94.5 فیصد تک مؤثر ہے۔
اس سے قبل امریکا کی ایک اور دوا ساز کمپنی ‘فائزر’ نے اپنی
کورونا ویکسین کے لیے پہلے ہی امریکی منظوری کی درخواست دائر کررکھی ہے۔

کووڈ-19 کی ویکسین کی جنگ میں ابھی تک آکسفورڈ یونیورسٹی کی تیار کردہ ویکسین سب سے سستی ہے
جس کی ایک دوا(ڈوز) کی قیمت تقریباً 3 برطانوی پاؤنڈ ہعنی (641 پاکستانی روپے) ہے
فائزر ویکسین کی قیمت 15پاؤنڈ (3ہزار 205 روپے) اور موڈرنا کی 25 پاؤنڈ یعنی (5ہزار 342 روپے) ہے۔
امریکی کمپنی موڈرینا کے آخری مرحلے کے ٹرائل میں 30ہزار افراد
کو شامل کیا تھا جن میں سے196 افراد میں کووڈ کی تصدیق ہوئی۔

ان میں سے 30 شدید بیمار ہوئے اور ایک شخص کی ہلاکت رونما ہوئی تھی
تاہم کسی کو بھی موڈرینا ویکسین استعمال نہیں کرائی گئی تھی۔
ٹرائل میں 7ہزار افراد 65 سال سے زائد عمر کے تھے اور
5 ہزار سے زیادہ ایسے جوان لوگ تھے جو مختلف امراض ذیابیطس، موٹاپے اور امراض قلب کا شکار تھے

آکسفورڈ کی ویکسین کو دور دراز علاقوں میں تقسیم کرنا آسان ہے
کیونکہ اسے انتہائی کم درجہ حرارت کی ضرورت نہیں آزما ئشی مراحل میں
آکسفورڈ کی ویکسین کے مثبت نتائج 62 سے 90 فیصد ہیں جو باقی 2 ویکسینز کے مقابلے کم ہیں


شیئر کریں: