March 21, 2020 at 9:15 pm

خیبر پختونخواہ کے محکمہ ریلیف نے کوروناسے جاں بحق افرادتدفین سے متعلق طریقہ وضع کرلیا گیا ہے۔
کورونا سے جاں بحق افراد کی میتوں کو خصوصی گاڑیوں میں اسپتال سے منتقل کیا جائے گا۔
میتوں کی منتقلی ، غسل دینے اور ڈھانپنے کیلئے خصوصی ٹیمیں تشکیل دی جائیں گی۔
میت کو اسپتال ہی میں غسل دیا جائے گا، میت کو لیک پروف پلاسٹک شیٹس میں لپیٹ کر تابوت میں ڈالا جائے گا۔
میت کو غسل دینے کے بعد استعمال کیا جانے والا پانی نالہ میں بہانے کے بجائے ضائع کیا جائے گا۔
جاں بحق افراد کے لواحقین پلاسٹک شیٹس چڑھانے کے بعد اسپتال میں ہی آخری دیدار کرسکیں گے۔
میت کا آخری دیدار کرنے والوں کیلئے فول پروف حفاظتی کٹس پہننالازمی ہوگا۔
میت کو غسل دینے کے بعد جگہ کو ہائیو کلورائیٹ نامی کیمکل سے دھویا لازمی ہو گا۔
میت کے کفن پر بھی ہائپو کلورائیٹ ڈالا جائے گا متوفی کے استعمال کی تمام چیزیں تلف کی جائیں گی۔
میت کو گھر منتقل کرنے والی گاڑی کو واپسی پر ہائپوکلورائیٹ سے دھویا جائے گا۔
میت لے جانے والی گاڑی میں ڈرائیور کے علاوہ کوئی نہیں بیٹھے گا۔
میت کو گھر منتقل کرنے کے بعد کسی کو آخری دیدار کی اجازت نہیں دی جائے گی۔
میت کو جلدازجلد دفنایا جائے گا جنازہ محدود رکھنے کی کوشش کی جائے گی۔
کوروناسے انتقال کرنے والے کی میت کا پوسٹ مارٹم نہیں کیا جائے گا۔
میت کو اسپتال سے گھر منتقل کرنے والا تدفین تک وہاں موجود رہے گا۔
ان قوانین اور ضابطہ اخلاق کی پابندی سب پر لازم ہو گی۔

Facebook Comments