March 22, 2020 at 12:08 am

عمران عثمانی
کرکٹرز گھروں میں قید تو ہوگئے لیکن اپنی عادت و پیشہ وارانہ پریکٹس سے کیسے دور رہ سکتے ہیں۔
دنیائے کرکٹ کے نامی گرامی پلیئرز اپنے اپنے گھروں میں روزانہ کی بنیاد پر پریکٹس و ورزش میں مصروف ہیں.
کرکٹرز بچوں اور نوجوانوں کے لئے آئیڈیل بھی ہوتے ہیں اور رول ماڈل بھی.
دیکھئیے اپنے رول ماڈل کو کہ گرائونڈز کی بندش ،کھیل کی معطلی کے بعد گھر کی 4 دیواری میں بھی وہ اپنی معمول کی پریکٹس جاری رکھے ہوئے ہیں۔
اس لیے کوئی جہاں بھی ہے اور جیسے بھی.

اپنی معمول کی پریکٹس ورش اور احتیاط جاری رکھے.
دیکهئے اگر مطلوبہ سامان نہیں بھی تو بھی عزم کرکے مرضی کی چیز بنائی جاسکتی ہے .
اب انگلش وکٹ کیپر جوس بٹلر کو دیکھیں کٹ،پیڈ حتی کہ ہیلمٹ پہنے زمین پر لیٹے ایکسرسائز کر رہے ہیں اور اہلیہ اس میں امدد فراہم کر رہی ہے.

سابق اسٹار این بیل کے گھر میں شاید گیند نہیں تھی انھوں نے ٹشو رول کو گیند بناکر پریکٹس کی اور خوب کی ۔

Facebook Comments