کراچی میں ایپلی کیشن “پولیس فار یو” کہاں غائب ہو گئی؟

شیئر کریں:

کراچی پولیس کی جانب سے 2019 عوام کو کسی بھی واردات کا فوری اندارج کے لیے بنائی جانے
والی موبائل ایپلی کیشن چند ماہ ہی غیر فعال ہو گئی۔

سابق ایڈیشنل ائی جی سندھ ڈاکٹر ضمیر شیخ کی جانب سے تھانہ کلچر کی بہتری اور پولیس اور
عوام کے درمیان رابطے کے لیے ایپلی کیشن بنائی گئی تھی۔

ایپلی کیشن “پولیس فار یو” چند ماہ بعد ہی غیر فعال ہو گئی اور اس وقت بھی اس کا کوئی حال نہیں۔
شہریوں کو گھروں پر ہی سہولت دینے کی کوشش کی گئی تھی کہ وہ پولیس کی زیادتی کو بھی اس
ایپلی کیشن پر رپورٹ کر سکیں۔

ایپلی کیشن میں واٹس ایپ نمبر بھی دیا گیا تھا جس پر رپورٹ درج کی جا سکتی تھی۔
بدقسمتی سے ایپ کے گوگل پلے اسٹور سے بھی اس ایپلی کیشن کو غائب کر دیا گیا ہے۔
واٹس ایپ کے لیے دیا جانے والا نمبر بھی غیر فعال ہو گیا ہے۔
ایپ کی مدد سے کراچی میں دنیا بھر کے قونصل خانے بھی چند منٹ میں پولیس سے مدد حاصل کر سکتے تھے۔
کراچی کے شہریوں نے پولیس کے محکمہ کی اس لاپرواہی پر حیرانی کا اظہار کرتے ہوئے متعلقہ
افسران سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔


شیئر کریں: