ڈاؤ یونیورسٹی میں یوم امراض قلب آگہی واک اور سیمینار

شیئر کریں:

ڈاؤ یونی ورسٹی میں‌ یوم امراض قلب پر آگہی واک اور سیمینار منعقد کیا گیا آگہی واک اور سیمینار
میں پرو وائس چانسلرز،ڈاکٹر کرتا ر ڈاوانی،پروفیسر زرنازواحد،پروفیسر نصرت شاہ، ڈاکٹر طارق فرمان
ڈاکٹراختر علی بلوچ،بریگیڈئر شعیب،ڈاکٹر زاہد اعظم و دیگر شریک ہوئے۔

سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے پروفیسر محمد سعید قریشی نے کہاکہ غذا اور ورزش پر توجہ دے کر ہم
امراض قلب سے محفوظ رہ سکتے ہیں سرکاری سطح پر بھی علاج سے زیادہ بچاؤ پر توجہ دینے کی ضرورت
ہے اس کےلیے مہم چلائی جائے اورامراض قلب سے محفوظ فضا اور ماحول بنایا جائے علاج مہنگااور بچاؤ
سستا ہے۔
انہوں نے کہاکہ سگریٹ نوشی ترک کر کے ورزش کا وقت بڑھاکر زندگی بڑھائی جاسکتی ہے۔ پروفیسر
زرناز واحد نے کہاکہ زندگی بھر دل ہمارے ایک بہت مضبوط عضو کے طور پر اہم کردار ادا کرتا ہے۔
ایک صحت مندزندگی کو کامیاب زندگی دل ہی بناتاہے اس لیے دل کی قدر کیجیے اور اس کا خیال چہل
قدمی اور ورزش کے ذریعے رکھا جاسکتاہے۔

اپنے افتتاحی خطاب میں ڈاکٹر طارق فرمان نے کہاکہ دنیا میں سالانہ ایک کروڑ ستر لاکھ یعنی سترہ ملین افراد دل کی بیماریوں کا شکار بن کر موت کے منہ میں چلے جاتے ہیں پاکستان میں یہ تعداد سالانہ ڈھائی لاکھ تک پہنچ جاتی ہے دل کے دورے کا بہت اہم سبب شریانوں کی بندش ہے ساری دنیا میں اسی بات پر زور دیا جارہاہے احتیاط علاج سے بہتر ہےزندگی عادات و اطوار میں تبدیلی لائی جائے تو شریانوں کی بندش کو روکا جاسکتاہے انہوں نے کہاکہ اگر ذیابیطس،بلڈ پریشرکے امراض کو قابو کیا جائے سگریٹ نوشی کرتے ہیں تو ترک کردی جائے، چہل قدمی اور ورزش کو معمول بنا لیا جائے اور صحت بخش غذائیں استعمال کی جائیں تو دل کی دیگر بیماریوں کے علاوہ شریانوں کی بندش سے بھی بچاؤ ممکن ہے انہوں نے کہا کہ علاج مہنگا تو ہے ہی مگر اکثر صورتوں میں بروقت دستیاب نہیں ہوتا اور تاخیر کی صورت میں جان چلی جاتی ہےبچ جائے تو زندگی بھر دواؤں کے سہارے جیناپڑتاہے انہوں نے کہاکہ ڈاؤ انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں امراض قلب کے علاج کی تمام سہولتیں موجود ہیں اور خاص طور پر شہر کے وسطی ،شرقی اور ملیر کے لیے یہ ایک بہترین علاج کا مرکز ہے مگر ہم پھر بھی یہی مشورہ دیں گےاحتیاط کریں اور اپنے دل کو ڈاکٹر سے دور رکھیں۔سیمینار کے اختتام پر وائس چانسلر پروفیسر محمد سعید قریشی نے پرو وائس چانسلر زپروفیسر زرناز واحد، پروفیسر نصرت شاہ،ڈاکٹر اختر علی بلوچ،ڈاکٹر زاہد اعظم، ڈاؤ انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی کے سربراہ ڈاکٹر طارق فرمان ڈائریکٹر او پی ڈی ڈاکٹر رستم زمان آئی بی ایس کے ڈائریکٹر بریگیڈئر شعیب احمد ودیگر کو شیلڈز دیں۔


شیئر کریں: