پرائیویٹ اسکولز حکومت کے سامنے ڈٹ گئے

شیئر کریں:

آل پاکستان پرائیویٹ اسکولز فیڈریشن نے وزرا تعلیم کے فیصلوں کو مسترد کر دیا ہے۔
فیڈریشن کے رہنما کاشف مرزا نے نیا پنڈورا باکس بھی کھولتے ہوئے مطالبہ کیا کہ بورڈ امتحانات
منسوخ کرنےکی صورت میں تعلیمی بورڈز کی فیس اور فنڈز کی مد میں 45 لاکھ طلبا
سے وصول شدہ 25 ارب روپے طلبا کوواپس کیے جائیں۔
آل پاکستان پرائیویٹ اسکولز فیڈریشن کا کہنا ہے کہ بورڈ امتحانات منسوخ کرنے اور طلبا کا
مستقبل برباد کرنےکی بجائے بورڈ امتحانات سماجی فاصلے کو برقرار رکھ منعقد کیے جائیں۔
وزرائے تعلیم سے اختلافات رائے رکھنے والے پرائیوٹ اسکولز مالکان بھی بچوں سے
تعلیمی ادارے بند ہونے کے باوجود فیسیں وصول کر رہے ہیں ۔
اسکولز مالکان نے خود تو بلڈنگ کے کرائے، یوٹیلٹی بلز معاف کروا لیے لیکن بچوں
کے والدین کو ریلیف دینے کو تیار نہیں۔
بچوں کے والدین نے حکومت سے اپیل کی ہے کہ موجودہ دور کی فیسیں معاف کرائی جائیں۔


شیئر کریں: