پاکستان کی جیت کا جشن، ہندو شوہر نے مسلمان بیوی اور سسرالیوں پر مقدمہ درج کروادیا

شیئر کریں:

ٹی 20 کرکٹ‌ ورلڈ کپ میں‌ پاکستان کے ہاتھوں بھارت کی زلت آمیز شکست کے بعد مسلمانوں کے خلاف بھارت
میں مقدمات قائم کرنے کا سلسلہ جاری ہے. کبھی کشمیری نوجوان طلبہ کو دھر لیا جاتا ہے تو کبھی بزرگ شہریوں
کو حوالات کے پیچھے پہنچا دیا جاتا ہے.

مسلمانوں کے خلاف بھارت کی سب سے متعصب ریاست اترپردیش کے ضلع رام پور میں‌ مسلمان خاندان کے خلاف
مقدمہ درج کرایا گیا ہے.

بھارت کی شکست پر خوشی منانے والے کشمیری طلبہ پر بغاوت کا مقدمہ

رام پور کے علاقے عظیم نگر میں‌ ایک شخص ایشا میا نے تھانہ میں‌ درخواست جمع کرائی ہے کہ اس کی بیوی
رابیعہ شامی اور ان کے خاندان کے افراد نے پاکستان ٹیم کی کامیابی کا جشن منایا.

بھارت کی شکست پر پٹاخے چھوڑے گئے اور خوب شور شرابا کیا اور بھارت کی تذلیل کی گئی لہزا انہیں‌ گرفتار
کیا جائے.

گنج پولیس اسٹیشن میں‌ مسلمان خاندان کے خلاف مقدمہ درج کرلیا. 24 اکتوبر کو ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کے پہلے میچ
میں پاکستان نے بھارت کو دس وکٹ سے شکست دی تھی اس شکست پر بھارتی ٹیم پر کڑی تنقید اور پاکستان
کی کارکردگی کو سراہا گیا.

ہندؤں کے علاقے میں بریانی کا ہوٹل کس سے پوچھ کے کھولا؟

مسلمان بیوی اور اس کے اہل خانہ کے خلاف مقدمہ درج کرانے والے ہندو شوہر نے اپنی اہلیہ کی طرف سے
طلاق کا دعوی دائر کرنے پر انتہا پسندی کی بنیاد پر مقدمہ درج کرایا ہے.
رابیعہ نے شادی کے کچھ عرصے بعد ہی اپنے ہندو شوہر سے علیحدگی اختیار کر لی تھی.


شیئر کریں: