پاکستان کرکٹ ٹیم آسٹریلیا کے خلاف آج کیا حکمت علی اختیار کرے گی؟

شیئر کریں:

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ‌ کا آج دوسرا سیمی فائنل پاکستان اور آسٹریلیا کے درمیان شام سات بجے کھیلا جانا ہے. قومی
ٹیم نے اس انتہائی اہم میچ کی بھرپور تیاری کر رکھی ہے.

اس وقت سب کے زہن میں‌ یہ سوال ابھر رہا ہے کہ پاکستان کرکٹ ٹیم آسٹریلیا کے خلاف آج کس حکمت عملی
کے تحت میدان میں اترے گی؟

ابھی تک پاکستان کرکٹ ٹیم نے بیٹنگ، باؤلنگ اور فیلڈنگ تینوں‌ ہی شعبوں میں‌ بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیا
ہے اوپنر ہوں‌ یا ٹیلنڈرز سب ہی نے اپنا اپنا کردار احسن طریقے سے انجام دیا ہے.

فائنل میں‌ کپتان بابر اعظم اور رضوان کی کوشش ہو گی کہ وہ ابتدائی پاور پلے میں زیادہ سے زیادہ رنز بنائیں
تاکہ بعد میں‌ آنے والوں‌ پر دباؤ‌کم ہو اور وہ آخری اوورز میں‌ جارحانہ انداز اختیار کرتے ہوئے مخالف ٹیم کو
مشکل ہدف دینے میں‌ کامیاب ہو سکیں.

اسی طرح باؤلرز کی بھی یہی کوشش ہوگی کہ وہ پہلے اوور ہی سے آسٹریلین بیٹسمینز کو دباؤ رکھیں تاکہ وہ
غلطی کر کے اپنی وکٹس گنوائیں۔

ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کی تاریخ میں شاید پاکستان واحد ٹیم ہے جس نے اپنا کوئی میچ ہارے بغیر پانچوں میچز
میں کامیابی حاصل کر کے سیمی فائنل تک رسائی حاصل کی ہو۔

اب پاکستان کرکٹ ٹیم اور ٹی ٹوئنٹی ورلڈ کپ کی ٹرافی کی راہ میں صرف دو میچز کا فاصلہ رہ گیا ہے اور
امید یہی کی جارہی ہے کہ پاکستان اپنی کامیابی کا سفر اسی طرح جاری رکھے گا۔

شائقین کرکٹ کے بھی بہترین کھیل دیکھنے کے لیے فائنل میں نیوزی لینڈ کے ساتھ پاکستان کو دیکھنا چاہتے
ہیں کیونکہ نیوزی لینڈ کو گروپ میچ میں شکست کا بدلہ لینے کا موقع میسر آئے گا اور اسی طرح پاکستان کو
بھی ناقابل شکست رہنے کا ریکارڈ مزید بہتر بنانے کا موقع ملے گا۔


شیئر کریں: