پاکستان نے غزہ میں سب سے زیادہ امداد بھیجی

پاکستان غزہ پر اسرائیلی جارحیت کے دوران امدادی سامان بھیجنے والے ممالک کی فہرست میں سرفہرست ہے. مصرکی
تنظیم ہلال احمر کے مطابق پاکستان غزہ کے محصور عوام کو زیادہ امداد بھیجنے والے ممالک میں چھٹے نمبر پر ہے.

پاکستان نے غزہ کے بےکس عوام کے لئے ابھی تک 165.6 ٹن امدادی سامان پہنچایا ہے. 14 نومبر تک کے اعداد و شمار
کے مطابق غزہ کی پٹی کو امدادی سامان بھیجوانے والے ممالک کی تعداد 31 ہے.
پاکستان کے 165.6 ٹن امدادی سامان کے مقابلے میں بھارت نے صرف 38 ٹن امدادی سامان غزہ پہنچایا ہے. سب سے
کم امدادی سامان فراہم کرنے والے ممالک میں سنگاپور9.4 ٹن , برازیل 3 ٹن اور ارجنٹائن نے صرف اور صرف ایک ٹن
امدادی سامان بھیجوایا ہے.

غزہ جنگ بندی میں 2 روز کی توسیع

غزہ کی پٹی کو سب سے زیادہ امدادی سامان مصر نے 8991.38 ٹن فراہم کیا. دوسرے نمبر پر لیبیا نے غزہ کے عوام کے
لیے 953.9 ٹن امدادی سامان فراہم کیا.
کویت 498.1 ٹن امدادی سامان کے ساتھ تیسرے نمبر پر سرفہرست ہے. قطر 348.8 ٹن امدادی سامان کے ساتھ چوتھے اور
ترکیہ 204.6 ٹن امدادی سامان کے ساتھ پانچویں نمبر پر ہے.
سعودی عرب نے غزہ کے محصورین کے لیے 136.6 ٹن امدادی سامان فراہم کیا. روسی فیڈریشن نے غزہ کے محصورین کے
لیے اب تک 115ٹن امدادی سامان فراہم کیا.
اس کے برخلاف یورپی ممالک کی جانب سے غزہ کے مجبور عوام کی زیادہ امداد نہ کیے جانے کا رجحان سامنے آیا ہے. اب
دیکھنے میں آیا ہے کہ یورپی ممالک کے عوام غزہ کے عوام کے حق میں ریلیاں نکال رہے ہیں اور ان کے حکمران اسرائیل
کی حمایت میں بیان دے رہے ہیں.

اسلامی ممالک کی تنظیم اور 41 ملکی فوج کہاں ہے؟

یاد رہے اسرائیل نے 7 اکتوبر 2023 کو فلسطین کے مظلوم عوام پر جنگ مسلط کی تھی اب تک غزہ میں 20 ہزار سے
فلسطینی شہید اور 40 ہزار سے زائد زخمی ہوچکے ہیں. شہید اور زخمیوں میں سے بیشتر عورتیں اور بچے ہیں.
غزہ میں اتنی اموات اور زخمیوں کی وجہ سے موضی امراض‌پھیلنے کا خدشہ بھی پیدا ہو گیا ہے جہاں پہلے ہی سے انسانی المیہ شدید
ہو چکا ہے.