مولانا قلب صادق کی حالت بدستور تشویش ناک، دعاؤں کی اپیل

شیئر کریں:

ممتاز عالم دین اور اسکالر مولانا قلب صادق لکھنو کے اسپتال میں موت اور زندگی سے
جنگ لڑ رہے ہیں۔

مولانا قلب صادق کی حالت بدستور تشویش ناک

قلب صادق نمونیا بگڑنے کی وجہ سے اسپتال میں پچھلے ایک مہینے سے زیر علاج ہیں۔
علامہ صاحب کی صحت کو لے کر بڑی افواہیں گردش کر رہی تھیں گزشتہ روز ان کے فرزند
سبطین نوری نے اپنے ویڈیو بیان میں وضاحت کی۔
مولانا قلب صادق کی حالت بدستور تشویش ناک، دعاؤں کی اپیل

سبطین نوری کا کہنا ہے کہ علامہ صاحب کی طبعیت تشویش ناک ضرور ہے لیکن ٹھراؤ آیا ہے۔
انہوں نے چاہنے والوں سے اپیل کی ہے کہ وہ افواہوں سے گریز کرتے ہوئے ان کی زندگی کی دعا کریں۔

علمی گھرانے سےتعلق رکھنے والے علامہ قلب صادق کا شمار عصر حاضر کے جید علما کرام میں ہوتا ہے۔
قلب صادق کا مجلس سید الشہدا پڑھنے کا انداز جداگانہ اور بڑے احسن انداز سے مقصد عزا
سمجھایا کرتے رہے ہیں۔
یہی وجہ ہے کہ انہیں اپنے کیا پرائے اور ہندو معاشرے میں بھی سب ہی عزت کی نگاہ سے دیکھتے ہیں۔
82 سالہ بزرگ عالم دین قلب صادق آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ کے نائب صدر بھی ہیں۔

قلب صادق کے علم کا چرچہ صرف انڈیا اور پاکستان ہی نہیں مرجعیت کے مراکز میں بھی نام رہا ہے۔
ان کی ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنائی سے بھی ملاقاتیں رہی ہیں۔


شیئر کریں: