معاشرہ عدم برداشت کامتحمل نہیں ہوسکتا،آصف مصور

انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ
شیئر کریں:

انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی نائب صدر آصف مصور نے کہا ہے کہ پاکستان کامعاشرہ عدم برداشت کامتحمل نہیں ہوسکتا۔

ہم تشدد پسند جنونیوں اور دوسروں سے تعصب کامظاہرہ کرنے والے انتہاپسند عناصر کولگام ڈالناجانتے ہیں۔

جس نے دوسروں کے ساتھ حقارت کامظاہرہ کرنے کی جسارت کی اس کے ساتھ قانون کی زبان میں بات کی جائے گی۔

مخصوص طبقات کے رویوں میں شدت پسندی کارجحان ایک بڑاسوالیہ نشان ہے۔

کوئی دوسرے پراپنی رائے نہیں تھوپ سکتاآزادی اظہار پر پہرے لگانے کی اجازت نہیں دیں گے۔ وہ نیویارک سے انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ کے اجلاس سے ٹیلیفونک خطاب کررہے تھے۔

آصف مصور نے کہا کہ پاکستان میں صرف ایجنڈے کی زبان میں بات سنی جائے گی۔ مٹھی بھرڈنڈے بردار عناصر معاشرے کولاٹھی سے نہیں ہانک سکتے۔

دین کے نام پردکانداری کرنیوالے چندسکوں کیلئے عوام کاسکون غارت نہ کریں۔

انہوں نے کہا کہ دین کے نام نہادعلمبرداروں نے عوام کوگمراہ کرنے کے سواکچھ نہیں کیا۔

پاکستان میں کسی اقلیت کوخطرات درپیش نہیں وہ مکمل آزادی کے ساتھ اپنی مذہبی رسومات اداکررہے ہیں۔

کوئی مخصوص گروہ کسی اقلیت کوہراساں نہیں کرسکتا۔

انٹرنیشنل ہیومن رائٹس موومنٹ معاشرے میں مذہبی ہم آہنگی اورقومی رواداری کے فروغ کیلئے اپنابھرپورکرداراداکرے گی۔

پاکستان ہراقلیت کیلئے جنت ہے کوئی طبقہ اس جنت کوجہنم نہیں بناسکتا۔پاکستانیوں کے لوگ اقلیتوں کی مذہبی آزادی اوران کے بنیادی حقوق کابھرپوراحترام کرتے ہیں۔


شیئر کریں: