مسلمان اکثریتی ملک انڈونیشیا میں کتے کا گوشت زیادہ کھایا جانے لگا

شیئر کریں:

مسلمان آبادی کے لحاظ سے عالم اسلام کے سب سے بڑے ملک انڈونیشیا میں کتے کے کوشت کی فروخت
میں ریکارڈ اضافہ ہوا ہے. انڈونیشیا کی 27 کروڑ سے زائد آباد میں 87 فیصد مسلمان، 7 فیصد پروٹیسٹنٹ،
3 فیصد کیتھولک اور 1.5 فیصد ہندو ہیں.

اسلام میں سور کی طرح‌ کتے کا گوشت کھانا بھی حرام ہے. ملک میں‌ جانوروں‌ کے حقوق کے لیے کام
کرنے والی تنظیموں کے احتجاج کے باوجود اس کی فروخت بڑھتی جارہی ہے.

کتے کا گوشت زیادہ تر مسیح اکثریتی آبادی والے علاقوں شمالی سماترا، شمالی سلاویسی اور مشرقی نوسا
تینگارا میں کھایا جاتا ہے ان ہی علاقوں مین 9 فیصد مسیح آبادی آباد ہے.
رپورٹ کے مطابق ملک کی 7 فیصد آبادی کتے کا گوشت پسند کرتی ہے.


شیئر کریں: