لاہور کے اسکولوں میں بچوں کو مشکلات کا سامنا، بجلی اور پانی سے بھی محروم

شیئر کریں:

لاہور سے اجلال زیدی

پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہور میں حصول تعلیم کے دوران بچوں کو انتہائی مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔ سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ بوائز مڈل اسکول جعفریہ کالونی بند روڈ میں زیر تعلیم بچے بجلی سے محروم ہیں۔
پنجاب میں تعلیم دینے کے لئے سہولیات کا نعرہ تو دوسری جانب لاہور جیسے شہر میں بعض اسکولوں میں بجلی بھی نہیں ہے۔ اسکولز مانیٹرنگ کرنے والی ٹیمیز صرف کاغذوں میں موجود ہیں اور عملی طور پر کچھ نہیں کررہی ہیں۔
گزشتہ 4 ماہ سے سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ سکول بند روڈ میں زیر تعلیم بچوں کو بجلی میسر نہیں۔ اسکول کے ہیڈ ماسٹر کی جانب سے بجلی کا بل 4 ماہ سے واجب الادا ہے۔
طلبا کے مطابق بجلی نہ ھونے کے باعث اندھیرے میں تعلیم حاصل کرنے میں بے پناہ مشکلات ہیں۔ گرمیوں میں بنا پنکھوں کے اب سردیوں میں اندھیرے میں تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔
ڈیڑھ لاکھ سے زائد کا بل 4 ماہ سے ہیڈ ماسٹر کی جانب سے ادا نہیں کیا گیا۔ چھ سال سے زائد عرصہ سے یہاں ہیڈ ماسٹر تعینات ہیں لیکن اسکول کے مسائل جوں کے توں ہی رہتے ہیں۔
سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ جعفریہ بوائز اسکول اور گورنمنٹ گرلز اسکول میں صرف ایک واش روم ہے۔ لڑکے اور لڑکیاں دو اسکول ہونے کے باوجود صرف ایک واش روم استعمال کرنے پر مجبور ہیں۔ اسکول میں سہولیات دینے کے وعدے ھوا کی طرح اڑا دیے گئے پینے کا پانی تک موجود نہیں اور نہ ہی کوئی فلٹریشن پلانٹ موجود ہے۔
سرکاری سطح پر اسکولوں میں عدم سہولیات پر محکمہ اسکول اینڈ ایجوکیشن کی کارکردگی پر سوالیہ نشان لگا ہوا ہے۔ ن لیگ حکومت سے تبدیلی سرکار کے نور نظر متعدد بار سی او لاہور بھی اسکولوں کی حالت زار بدلنے میں ناکام دیکھائی دیتے ہیں۔


شیئر کریں: