لاطینی امریکا میں خواجہ سراہوں کا پہلا اسکول

شیئر کریں:

لاطینی امریکا میں خواجہ سراہوں کے لیے پہلا پرائمری اسکول قائم کردیا گیا۔
سینٹیاگو کے اس اسکول میں زیادہ تر طلبا خواجہ سرا ہیں۔
اسکول انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اس اسکول میں ملک کے دیگر علاقوں سے
تعلق رکھنے والے بھی خواجہ سرا بچے تعلیم حاصل کرتے ہیں۔
ایسے بچے جن کو ملک کے دیگر اسکولوں میں ان کی جنس کی وجہ سے مشکلات کا سامنا ہوتا ہے
یا ان سے امتیازی سلوک کیا جاتا ہے وہ بچے سیٹیاگو کے اسکول میں تعلیم حاصل کرتے ہیں۔
پہلی خواجہ سرا راولپنڈی پولیس اسٹیشن میں تعینات
اسکول انتظامیہ کا کہنا ہے کہ یہ اسکول خواجہ سرا بچوں کے لیے خاص طور پر بنایا گیا ہے۔
اسکول میں بچے کھل کر کھیلتے ہیں، ہنستے ہیں اور اپنی رائے کا اظہار کرتے ہیں۔
اس اسکول میں بچوں کی جنس کےلحاظ سے کوئی بھی ان سے فرق نہیں کرتا اس لیے بچوں کی بہتر نشونما ہوتی ہے۔
اسکول کی ڈائریکٹر کا کہنا ہے کہ ان نے 2018 میں جب اسکول شروع کیا تھا تب ان کے پاس چھ طالب علم تھے۔
آج ان کے اسکول میں38 خواجہ سرا بچے تعلیم حاصل کر رہے ہیں۔


شیئر کریں: