قمبر لغاری اورعرفان لغاری کو جیل بھیج دیا گیا

قمبر لغاری اورعرفان لغاری کو جیل بھیج دیا گیا

میہڑ دادو سے گرفتار پاکستان پیپلز پارٹی کے قمبر لغاری، رکن قومی اسمبلی عرفان لغاری کو عدالت میں پیش کیا گیا. انسداد دہشتگردی
عدالت کے جج کی چھٹی کے باعث ملزمان کو سیشن کورٹ نوشہرو فیروز لایا گیا. ایس پی سہائی عزیز حفاظتی انتظامات کی خود نگرانی کر رہی
ہیں. قمبر لغاری و دیگر کو 16 تاریخ تک جیل بھیج دیا گیا.
سیشن جج محبوب عالی جواہری نے پولیس ریمامڈ کی درخواست خارج کردی اور ملزمان کو جیل کسٹڈی کردیا گیا. عدالت نے سوال کیا کہ
200 افراد نے فائرنگ کی لیکن کوئی بھی زخمی نہیں ہوا؟
آئی او نے عدالت کو بتایا کہ کوئی آرمی کا جوان زخمی نہیں ہوا. خیال رہے قمبر لغاری اور عرفان لغاری سمیت 200 افراد پر الزام
ہے کہ انہوں‌نے پاک فوج پر گولیاں چلائی تھیں.

میہڑ میں پاک فوج کے کیمپ پر حملے کے الزام میں دہشت گردی ایکٹ کے تحت گرفتار 9 ملزماں کو انسداد دہشت گردی
عدالت نوشیہروفیروز میں پیش کیا گیا. ملزمان میں پیپلز پارٹی کے رکن قومی اسمبلی عرفاں ظفر لغاری، پیپلز پارٹی سندھ کونسل کے
رکن اور سیتا ٹائون کے چیئرمین قمبر لغاری اور ان دونوں کے چار گارڈ بھی شامل ہیں.
ملزمان میں پیپلز یوتھ میہڑ کے صدر نظیر پہنور، نادر لغاری، سعید اللہ لاکھیر، میر محمد لغاری، غلام محمد ملاح، محمد اسلم سولنگی کے نام
بھی شامل ہیں.پاک فوج کے کیمپ پر حملے کیس کی تفتیش ایس ایچ او بی سیکشن انور لغاری سے واپس لے لی گئی ہے۔
کیس کی تفتیش اب رادھن تھانے کے ایس ایچ او منظور مستوئی کر رہے ہیں. واضح رہے کہ پاک فوج کی کیمپ پر حملے کی
دہشت گردی ایکٹ کی ایف آئی آر میں 200 نامعلوم افراد نامزد ہیں۔