فرانسیسی وزیر اعظم نے اہلیہ کو جعلی ملازمت کیوں دی؟

شیئر کریں:

یورپی ممالک بھی پاکستان کے نقش قدم پر چل پڑے۔
فرانسیسی وزیراعظم پر اپنی ہی اہلیہ کو غیرقانونی طور پر ملازمت دینے کا الزام ثابت ہوگیا۔
سابق فرانسیسی وزیر اعظم فرانسوا فیلئون نے اہلیہ کو جعلی ملازمت دی۔
فرانسوا فیلئون نے اپنی بیگم کو پارلیمنٹ میں جعلی ملازمت دی ہوئی تھی۔
سابق وزیر اعظم کی بیوی اپنی ملازمت پر حاضر ہوئے بغیر دس سال تنخواہ وصول کرتی رہی۔
فرانسیسی عدالت نے سابق وزیر اعظم کو ٹیکس دہندگان کی رقم استعمال کرکے اپنی اہلیہ کے لئے جعلی ملازمت پیدا کرنے کے الزام میں قصوروارقرار دے دیا۔

سابقہ صدارتی مہم کے دوران یہ الزام سامنے آیا تھا کہ سابق وزیر اعظم کی بیگم گھر بیٹھے جعلی ملازمت کی تنخواہ وصول کررہی ہیں۔
عدالت نے سابق وزیر اعظم کی اہلیہ ، پینیلوپ کو بھی اس معاملے میں قصوروار قرار دیا گیا ہے۔
66 سالہ فرانسوا فیلئوُن پر یہ پوزیشن پیدا کرنے کا الزام لگایا گیا تھا
جس نے اپنی اہلیہ کو عوامی فنڈز میں 1 ملین یورو ((1.13 ملین ڈالر) سے زیادہ کی ادائیگی کی تھی۔


شیئر کریں: