وزیر اعظم عمران خان کے ادارہ “ اکدار “ کا امریکا میں ورچول آفس

شیئر کریں:

اکدار سے متعلق خبر والے کی رپورٹ کے بعد پاکستان سمیت دنیا بھر میں پاکستانی کمیونیٹی نے سوالات اٹھانے
شروع کر دیے ہیں۔ کہ آخر یہ اکدار ہے کیا؟ اکدار عمران خان کا ادارہ ہے۔ عمران خان ڈیولپمنٹل اکیڈمک
ریسرچ (اکدار) کا امریکا کے انتہائی مہنگے ترین علاقے وائٹ ہاؤس کے قریب ورچول دفتر بنایا گیا ہے۔

امریکا میں پاکستانی ادارہ اکدار سربراہ عمران خان

1629 ڈیوس بلڈنگ کی تیسری منزل پر 300 سوئیٹ میں اکدار کا آفس ہے۔ نمائندہ خبر والے نے جب آفس کا
دورہ کیا تو معلوم ہوا وہاں تو کوئی عہدیدار باقاعدہ طور پر نہیں بیٹھتا۔ یہ دفتر محض پیغام رسانی اور طے
شدہ ملاقاتوں کے لیے استعمال کیا جارہا ہے۔ اس عمارت میں بے شمار کمپنیوں کے ورچول دفاتر ہیں۔

وزیر اعظم عمران خان گو کہ اس ادارہ سے رواں برس جون میں قطعہ تعلق کر چکے ہیں لیکن اب بھی ادارہ
ان ہی کے نام سے منسوب ہے۔ امریکا میں اس ادارہ کو دبیر ترمزی اور ایش ملک چلارہی ہیں۔ عمران خان
کے دورہ سے قبل وفاقی وزرا علی زیدی، زلفی بخاری اور دیگر نے ترمزی سے ملاقاتیں کیں اور پاکستان میں
سرمایہ کاری کے لیے بات چیت کی۔ یہ غیر سیاسی ادارہ پاکستان کا مثبت کردار دنیا بھر میں اجاگر کرنے
میں اہم کردار ادا کر رہا ہے۔ لیکن اسی ادارہ کے منشور میں پاکستان کا سیاسی مستقبل صدارتی نظام
سے جوڑنے پر زور دیا گیا ہے۔


شیئر کریں: