عمران خان نے نواز شریف کو شکست دے دی، 28 ماہ میں 36ہزار ارب کا قرض لیا

شیئر کریں:

پی ٹی آئی کی حکومت نے قرض لینے میں سب کے ساتھ اپنا بھی رکارڈ توڑ دیا
وفاقی حکومت کے قرضے 35 ہزار822 ارب روپے سے بھی تجاوز کر گئے حکومت نے پہلے 28 ماہ
میں ن لیگ کے مقابلے میں 207 فیصد زیادہ قرض لیا۔
اسٹیٹ بینک کے مطابق وفاقی حکومت کے قرضوں کا مجموعی حجم نومبر کے اختتام پر 358 کھرب
22 ارب 60 کروڑ روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا۔

پاکستان میں مزدوروں کی آمدنی کم مہنگائی میں اضافہ زیادہ

اٹھائیس ماہ کے دوران قرضوں میں اوسطا ہر ماہ 397 ارب 60 کروڑ روپے کا اضافہ ہوا یہ قرضہ ن لیگ
کے مقابلے میں 207 فیصد زیادہ ہے۔
ن لیگ کے پہلے 28 ماہ کے کے دوران قرضوں میں اوسطا ہر ماہ 129 ارب 90 کروڑ روپے کا اضافہ
ریکارڈ کیا گیا۔

اسٹیٹ بینک کے مطابق وفاقی حکومت کے قرضوں میں ایک سال کے دوران 358 کھرب 22
ارب 60 کروڑ روپے کا اضافہ ہوا۔
بارہ ماہ کے دوران وفاقی حکومت نے ملکی ذرائع سے 27 کھرب 80 کروڑ روپے کے نئے قرضے لیے۔
حکومتی قرضہ کی وجہ سے ملکی قرضوں کا حجم 241 کھرب 11 ارب 20 کروڑ روپے ہو گیا۔
بیرونی قرضے اس دوران 9 کھرب 91 ارب روپے کے اضافے سے 117 کھرب 11 ارب 40 کروڑ روپے تک پہنچ گئے۔


شیئر کریں: