عالمی وبا کے دوران نائجیریا میں لڑکیوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات میں اضافہ

شیئر کریں:

کورونا وائرس کی عالمی وبا نے نائجیریا کی خواتین کو دوہری مشکلات میں ڈال دیا۔
عالمی وبا کے دوران نائجیریا میں خواتین کے ساتھ زیادتی اور جسنی تشدد کے واقعات میں 64 فیصد اضافہ ہوگیا ہے۔

ملک کے بیشتر علاقوں سے نوجوان لڑکیوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات رپورٹ ہو رہے ہیں
جنہیں بری طرح جنسی تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔ ڈاکٹر انیتا کیمی نائجیریا میں ایک گائناکالوجسٹ ہیں۔

ڈاکٹر انیتا امریکا سے تعلیم یافتہ ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ نائجیریا میں خواتین کے جنسی استحصال میں اضافہ ہوا ہے۔
ڈاکٹر انیتا کا کہنا ہے کہ خواتین کے تحفظ کے لیے قائم کردہ ہیلپ لائن پر اب زیادہ کسیز رپورٹ ہورہے ہیں۔

ڈاکٹر انیتا نے بتایا کہ رواں ہفتے زیادتی کے دو بڑے کیسز سامنے آئے ہیں۔
22سالہ لڑکی کو یونیورسٹی کے پول میں زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔

خون سے لت پت لڑکی نے پول میں ہی جان دے دی۔
اور واقعے میں ڈکیتی کے دوران ڈاکو جواں سال لڑکی کو زیادتی کا نشانہ بناکر قتل کر گئے۔
ڈاکٹر انیتا نے بتایا کہ ان کے ادارے کا کام خواتین کو نہ صرف تحفظ فراہم کرنا ہے بلکہ
زیادتی کا شکار خواتین کو ذہنی اور جسمانی طبی امداد بھی دینا ہے۔

ڈاکٹر انیتا نے ایک اور لڑکی کا نام ظاہر کیے بغیر بتایا کہ اسے اس کے دوست نے ہی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔
دوست اس لڑکی کے گھر آیا اور زبردستی اس کے منہ پر ہاتھ رکھ کر زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔

زیادتی کے بعد دوست لڑکی سے معافی مانگ کر اس کے گھر سے روانہ ہوگیا۔
ڈاکٹر انیتا کا کہنا ہے کہ دوست ہے ہاتھوں زیادتی کا نشانہ بننے والے شدید ذہنی دباو کا شکار ہے۔
ان کا ادارہ ایسے لڑکیوں کو دوبارہ معاشرے کا فعال حصہ
بننے اور ان کی قانونی معاونت کرنے میں مدد دیتا ہے۔


شیئر کریں: