عالمی ادارہ صحت کے نمائندے ملک بدر

شیئر کریں:

مشرقی افریقہ کے ملک برونڈی نے عالمی ادارہ صحت کے نمائندے سمیت تین اور ماہرینِ صحت کو
ملک بدر کرنے کا حکم دیا ہے۔
سب کو ملک سے نکلنے کے لیے صرف 48 گھنٹے دیے گئے ہیں۔
برونڈی کی وزارت خارجہ نے فیصلے سے متعلق کوئی وضاحت جای نہیں کی۔
برونڈی میں 20 مئی کو صدارتی انتخابات منعقد ہوں گے اور ملک کو کورونا وائرس کی وبا کے
دوران ایسا کرنے پر تنقید کا سامنا ہے۔
زیادہ تر انتخابی ریلیوں میں شرکا سماجی دوری اور دیگر احتیاطی تدابیر کو نظر انداز کر رہے ہیں۔
ملک میں اب تک کورونا وائرس کے صرف 15 مصدقہ مریض ہیں اور ایک ہی موت ریکارڈ کی گئی ہے ۔


شیئر کریں: