شاہی احکامات کی خلاف ورزی پر ڈاکٹر برطرف

شیئر کریں:

کورونا وائرس کے شکار مسیحا بھی وائرس پھیلانے کا باعث بننے لگے۔
سعودی محکمہ صحت نے وائرس کا شکار ہونے کے بعد بھی احتیاطی تدابیر کی پابندی
نہ کرنے پر غیرملکی ڈاکٹر کے ساتھ معاہدہ ختم کر دیا۔
ادارہ امور صحت کے مطابق ڈاکٹر کا کورونا ٹیسٹ مثبت آیا تھا۔
اسے تحریری طور پر مطلع کر دیا گیا کہ وہ خود کو قرنطینہ کر لے اور کسی سے میل جول نہ رکھے۔
ڈاکٹر نے تحریری طور پر اس امر کا اقرار کیا تھا کہ وہ کسی سےمیل جول نہیں رکھے گا۔
ڈاکٹر نے شاہی احکامات اور وزارت صحت کی ہدایات کی پابندی نہ کرتے ہوئے خود کو
قرنطینہ کرنے کے بجائے دوسروں سے ملاقاتیں جاری رکھیں۔
شکایت کے بعد تحقیقات میں جرم ثابت ہونے پر کمیٹی نے ڈاکٹر سے معاہدہ ختم کرنے،
قانونی چارہ جوئی کے ساتھ قانونی جرمانے لینے کی بھی سفارش کی تھی۔
سعودی عرب میں وائرس پھیلانے والوں کو پانچ سال قید یا پانچ لاکھ ریال جرمانے کی سزا سنائی جا سکتی ہے۔
غیرملکیوں کو جرمانے کی سزا بھگتنے کے بعد ملک بدری اور ملک میں دوبارہ داخلے پر پابندی عائد ہے۔


شیئر کریں: