زیادتی کی کوشش پر ملزم کو پورے گاؤں کی خواتین کے کپڑے دھونے کی سزا

شیئر کریں:

خاتون سے زیادتی کی کوشش پر عدالت نے ملزم کو انوکھی سزا سنائی ہے۔ بھارت کی ریاست بہار
میں ملزم کو 6 ماہ تک گاؤں کی تمام عورتوں کے کپڑے دھونے کا حکم دیا گیا ہے۔

بہار کے ضلع مدھوبانی کی عدالت کے سیشن جج اویناش کمار نے ملزم کی ضمانت پر رہائی اس شرط
پر دی ہے کہ وہ چھ ماہ تک پورے گاؤں کی خواتین کے کپڑے بلامعاوضہ دھوئے اور پھر استری کر کے واپس
لوٹائے گا۔

عدالت نے سزا پر عملدرآمد یقینی بنانے کے لیے فیصلے کی کاپی گاؤں کی کونسل کے سربراہ کو بھی ارسال
کر دی۔
ساتھ ہی کونسل کو پابند بنایا گیا ہے کہ وہ بیس سالہ ملزم کے رویے اور عدالتی فیصلے پر عملدرآمد نہ ہونے پر
آگاہ کیا جائے۔

دلت بچے کے ہنومان مندر میں داخل ہونے پر ہزاروں روپے جرمانہ

گاؤں کی مجموعی آبادی دو ہزار کے قریب ہے اس گاؤں کے سربراہ نے فیصلے کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا ہے کہ
اس سے خواتین کی حفاظت اور وقار میں اضافہ ہوگا۔ ملزمان بھی ایسا فعل انجام دینے سے پہلے 100 بار
سوچیں گے۔

خیال رہے بھارت میں خواتین کی عزتیں لوٹنے کے واقعات میں بے پناہ اضافہ ہوا ہے اوروہاں غیرملکی خواتین
بھی محفوظ نہیں رہی ہیں۔ صرف ریاست بہار میں ساڑھے آٹھ ہزار سے زائد زیادتی کے واقعات رونما ہو چکے ہیں۔
رواں سال جولائی تک تقریبا ایک ہزار عصمت دری کے واقعات صرف ریاست بہار میں ریکارڈ کیے گئے ہیں۔


شیئر کریں: