دیامر میں بھی دھاندلی کا الزام، آزاد اور پی ٹی آئی امیدواروں میں تصادم کا خدشہ

شیئر کریں:

دیامر 15 حلقہ ایک میں پوسٹل بلٹ پیپر کے نتیجہ میں تاخیر اور ردوبدل کے الزام پر شاہراہ
قراقرم پر مظاہرین نے دھرنا دے دیا۔

چلاس میں دو آزاد امیدوار اور پی ٹی آئی کے درمیان تصادم کا شدید خدشات بڑھ چکے ہیں۔
آزاد امیدوار محمد دلپذیر خان کے حامیوں نے شاہراہ قراقرم کو متعدد مقامات پر احتجاج کے
باعث بند کردیا ہے۔

شاہراہ قراقرم کی بندش سے سیکڑوں گاڑیوں میں ہزاروں مسافر پھنس کر رہ گئے ہیں۔
شدید سرد موسم میں پھنسے افراد میں بزرگ،بیمار، بچے اور خواتین بھی شامل ہیں۔

مسافر شدید سرد موسم میں پریشان حال سڑک کھلنے کے منتظر ہیں لیکن انتظامیہ کوئی
پتہ نہیں ہے۔

مظاہرین کا کہنا ہے فارم 47 کے بعد پوسٹل بلٹ پیپر میں واضح طور پر محمد دلپذیر خان
کی برتری حاصل ہے۔

دیامر 15حلقہ 1 سے لوگوں کی بڑی تعداد شہر کے اندر گشت کر رہے ہیں۔
مظاہرین کا کہنا ہے بلٹ پیپر کی گنتی میں دھاندلی کی گئی ہے اور نتائج میں جن بوجھ
کے تاخیر کی جارہی ہے۔
آزاد امیدوار حلقہ نمبر 1 دیامر 15دلپزیر کے حامیوں نے شاہراہ قراقرم دڑن سے لے کر گونر
فارم تک مکمل بلاک کر دیا ہے۔
شاہراہ قراقرم پر احتجاجی دھرنا جاری ہے اور انتظامیہ مسلسل خاموش تماشائی کا کردار
ادا کر رہی ہے۔
مظاہرین کے نزدیک تیسرے نمبر والے کو کامیاب کرنے کیلئے پہلے اور دوسرے نمبر والے
کے 500 سو سے زائد بلٹ پیپر مسترد کیے جارہے ہیں۔


شیئر کریں: