دعا زہرا کو چشتیاں‌ سے بازیب کرالیا گیا

شیئر کریں:

کراچی سے 16 اپریل کو لاپتہ ہونے والی دعا زہرا کو پنجاب سے بازیاب کرالیا گیا ہے. دعا کو 10 جون کو
عدالت کے روبرو سندھ ہائی کورٹ‌ ممیں پیش کیا جائے گا.
سندھ پولیس نے لڑکی کی بازیابی کے سلسلے میں وزارت داخلہ اور پنجاب پولیس سے مدد کے لیے درخواست
کی تھی جس کے بعد لڑکی کی بازیابی عمل میں‌ لائی جاسکی. ساتھ ہی دعا کے شوہر ظہیر کو بھی حفاظتی
تحویل میں‌ لے لیاگیا. ظہیر کی پوری فیملی پہلے ہی پولیس کی حراست میں‌ تھی.
دعا زہراہ 16 اپریل کو کراچی کے علاقے گولڈن ٹاؤن سے لاپتہ ہوئی تھی اور پھر 26 اپریل کو خبر آئی
کہ اس نے لاہور میں‌ ظہیر سے پسند کی شادی کر لی. دعا کے والدین مسلسل میڈیا پر آکے کہتے رہے
کہ اسے اغوا کیا گیا ہے حالانکہ ماں کو بچی سے متعلق ہر قسم کی آگاہی ہوتی ہے.
دعا زہرا نے پولیس کی دوڑیں لگائے رکھی تھیں کبھی پولیس نے سندھ کے علاقے سانگڑھ تو کبھی لاہور
اور اب باالاخر بہاولنگر کی تحصیل چشتیاں‌ سے بازیاب کرالیا گیا ہے.


شیئر کریں: