خوبصورت زندگی انجوائے کرنی ہے تو ہر روز کچھ اچھا سنو ،کچھ اچھا دیکھو،کچھ نیا سوچو۔

شیئر کریں:

صبح کی دعا
تحریر اجمل شبیر

روز صبح جب انسان کچھ اچھا سنتا ہے،اچھا دیکھتا ہے اور اچھا سوچتا ہے تو اس کا سارا دن دلکش اور شاندار ہوجاتا ہے

انسان کی زندگی کا ہر دن جب اچھا ہوجاتا ہے ،تو اس کی زندگی خوشیوں اور دلکشی سے روشن ہوجاتی ہے،انسان پھر کھکھلاتے اور خوشبو پھیلاتے پھول جیسا ہوجاتا ہے

جب ایک ایک کرکے انسان کی زندگی کا ہر دن اچھا گزرتا ہے تو صرف اس کی زندگی نہیں بلکہ ساری انسانیت کی زندگی اچھی ہوجاتی ہے

خوش رہنا ہے تو ساری انسانیت کو پورے دل سے ہر صبح زندگی کا استقبال کرنا چاہیئے

انسان جب دل سے ہر صبح زندگی کا استقبال کرتا ہے تو وہ تازہ ہوا کے جھونکے جیسا ہوجاتا ہے

زندگی کا ہر دن شاندار اور خوبصورت بنانا ہے تو ہر روز صبح اٹھتے ہی مسکرایئے،

انسان کی زندگی کا ہر دن اس کی آنے والی زندگی کا پہلا دن ہے،ہر دن کا ایسا استقبال کریں جیسے وہ آپ کی زندگی کا پہلا دن ہے

ہر انسان کو مکمل یقین ہونا چاہیئے کہ ہر نیا دن اس کی زندگی کے بہترین دنوں میں سے ایک ہونے والا ہے،ایسا ہوگا تو زندگی رومی کے رقص جیسی ہے

خوش رہنا انسان کی بنیادی فطرت ہے،خوش رہنا ہے تو روز کچھ نہ کچھ نیا کام کریں ،ایسا انوکھا کام جو آپ نے پہلے کبھی نہیں کیا تھا

آج میں بہت خوش ہے،کیونکہ مجھے مکمل یقین ہے کہ آج ایسا کچھ نہ کچھ ضرور ہوگا جو آج سے پہلے کبھی نہیں ہوا تھا

خوش رہنا ہے ،پرسکون رہنا ،زندگی کے ہر لمحے کو جینا ہے تو ہر روز کچھ نیا سیکھیں ،ہر روز کچھ نیا دیکھیں ،ہر روز کچھ نیا سوچیں

آج میں خود سے وعدہ کررہا ہوں کہ
آج میں کچھ نیا سیکھوں گا
،کچھ نیا دیکھوں گا،کچھ نیا سنوں گا
کچھ نیا سوچوں گا ،اور کچھ نیا کام کروں گا

ماضی میں ہر انسان سے غلطیاں ہوتی ہیں ،غلطیوں سے ہی انسان سیکھتا ہے ،غلطیاں ہی انسان کو بلندیوں تک لیجاتی ہیں ،غلطیاں ہی انسان کو نیچے گراتی ہیں ،غلطیاں ہوں گی ،غلطیوں سے مت گھبرایئے ،جو غلطیوں سے سیکھتے ہیں ،وہی کمال کرتے ہیں ،جو ایک ہی غلطی بار بار کرتے ہیں اور اس غلطی سے سیکھتے نہیں ،ایسے انسانوں کو ناکام انسان کہا جاتا ہے

آج میں خود سے کمٹمنٹ کررہا ہوں کہ ماضی میں مجھ سے جانے انجانے جو بھی غلطیاں ہوئی ہیں،ایسی غلطیاں جس سے دوسرے انسانوں کا دل ٹوٹا ہو ،اس پر میں ان سب انسانوں سے دل کہ گہرائیوں سے معافی مانگتا ہوں اور وعدہ کرتا ہوں کہ آئندہ کبھی کسی انسان کو ہرٹ نہیں کروں گا

آج تک میرے ساتھ جس نے بھی دھوکا کیا ہے ،آج تک جس نے بھی مجھے ہرٹ کیا ہے ،آج تک جس نے بھی مجھے دکھ دیا ہے ،میں ان سب کو دل کی گہرائیوں سے معاف کرتا ہے

انسان کو دکھ دینا کا نام زندگی نہیں ہے ،انسانیت کو خوشی دینے کا نام زندگی ہے ،آج میں وعدہ کرتا ہوں کہ باقی زندگی صرف خوش رہوں گا اور انسانیت میں خوشیاں پھیلاوں گا۔

زندگی ماضی یا فیوچر نہیں ،زندگی لمحہ موجود ہے

اب میری توجہ گزرے ہوئے لمحوں پر نہیں ،آنے والے لمحوں پر ہے ،میرا دھیان گزرے ہوئے پل پر نہیں
بلکہ آنے والے پل پر ہے

میں نے آج کیا کرنا ہے ،کیسے زندگی جینی ہے ،اس کے بارے میں میرے پاس مکمل منصوبہ بندی ہے،
آج مجھے جو کچھ بھی کرنا ہے
اس کے بارے میں میں نے اچھے سے سوچ لیا ہے،اس سوچ کی خوشبو سے انسانیت کو بڑا مزہ آنے والا ہے

ہر انسان کے کچھ خواب ہیں ،ہر انسان ان خوابوں کو حقیقت میں بدلنا چاہتا ،آج میں بھی اپنے ہر خواب کو پانے کے لئے میں پوری طرح سے تیار ہوں

ہر انسان چاہتا ہے کہ اس کی زندگی کا ہر لمحہ پرسکون اور خوشیوں سے بھرپور ہو،میں بھی آج دل سے بہت پرسکون ہون،میرا من بلکل شانت ہے،اور میرا دھیان پوری طرح سے اپنے خواب پر ہے

میری سوچ بہت ہی پاک اور شفاف ہے،میں من سے یہ مانتا ہوں کہ کسی انسان کے ساتھ کبھی بھی کچھ غلط نہیں ہوتا، میرے ساتھ بھی آج تک جو کچھ بھی ہوتا آیا ہے اچھے کے لئے ہوتا آیا ہے

زندگی مشکلات کا نام نہیں ،زندگی ناممکنات کا نام نہیں زندگی اڈونچر اور رسک ہے

دوسرے انسانوں کی طرح میری زندگی میں جو بھی مسائل ہیں، مین ان مسائل کو اب مسائل کی طرح نہیں دیکھتا ، ،ایک چیلنج اور اڈونچر کے طور پر دیکھتا ہوں،اس لئے مجھے زندگی سے پیار ہے

آج میں جانتا ہوں کہ زندگی کیا ہے،خود کو جاننا زندگی ہے ،تمام مشکلات کے باوجود خود کو آگے بڑھانے کے چیلنج کو میں دل سے قبول کرتا ہون ،خود کو جاننے کے چیلینج کو میں دل سے قبول کرتا ہون ۔خود کو اندر سے طاقتور بنانے کے چیلنج کو میں قبول کرتا ہوں

زندگی کو انجوائے کرنا ہے تو انسان کو سارے challenges کا سامنا کرنا چاہیئے ،آج سے میری زندگی میں جو بھی چیلنجز آنے والے ہیں ،میں ان کا سامنا کرنے کے لئے پوری طرح سے تیار ہوں،میرے ساتھ سارے انسان وعدہ کریں کہ وہ آنے والے چیلنجز کا بہادری سے مقابلہ کریں گے ،ہر چیلنج میں خوشی اور سکون ہے ،پر سکون وہی ہے جس کی زندگی چینجز اور رسک سے بھری ہوئی ہے

زندگی کو جینا ہے تو زندگی سے پیار کریں ،انسانیت سے پیار کریں ،کائنات سے پیار کریں ،دوسرے انسانوں کی طرح مجھے بھی اپنی زندگی سے بہت پیار ہے،

دنیا کے ہر انسان میں خدا ہے ،ساری انسانیت ،ساری کرئیشن میں دیکھنے والا ایک ہی ہے ،جہاں خدا ہے ،وہاں انرجی ہے ،وہ انرجی جو اس کائنات کی زندگی کی وجہ ہے ،دنیا کا ہر انسان الہامی توانائی سے بھرا پڑا ہے،اس توانائی سے انسان اس وقت واقف ہوتا ہے جب وہ خود کو جاننے کے سفر پر نکلتا ہے ،آج سے میں خود کو جاننے کے سفر پر نکل رہا ہوں ،جلد میری ملاقات خدا سے ہے اور پھر میں اسی میں فنا ہوجانے والا ہوں اور ہمیشہ کے لئے کائنات میں رقص کرتے دیکھائی دینے والا ہوں۔

میں مائینڈ کے کنٹرول میں نہیں ہوں ،مائینڈ میرے کنٹرول میں ہے ،جس دن انسان اپنے مائینڈ کا آقا بن جائے گا پھر اسے سمجھ آئے گی کہ وہ کون ہے؟

آج سے میرا مائینڈ میرے کنٹرول میں ہے اور میرا مائینڈ ہر قسم کے درست فیصلے کرنے کے لئے مکمل طورپر تیار ہے

ہر انسان کی اندر کی دنیا میں مکمل شانتی اور سکون ہے ،میرا من بھی امن و سکون سے بھرا پڑا ہے، اس لئے آج سے وعدہ کرتاہوں کہ خود بھی خوش رہوں گا اور انسانیت میں بھی ہمیشہ خوشیاں پھیلاوں گا

خوش رہیں ،مست رہیں ،آجکل میں ہمیشہ خوش رہتا ہوں،مست رہتا ہے ،رومی کے رقص جیسا رہتا ہوں۔ ہر لمحے کا دل سے استقبال کریں ،اور مسکراتے رہیں ،آجکل میں بھی
ہنستا کھیلتا رہتا ہوں

زندگی بچوں کی معصوم مسکراہٹ جیسی ہے ،زندگی بہتی ندی جیسی ہے ،زندگی کھلتے گلاب جیسی ہے ،زندگی تازہ ہوا کے جھونکے جیسی ہے ،زندگی ہر انسان کے لئے بچوں کے کھیل جیسی ہے،زندگی ان کے لئے کھیل جیسی ہے جو یہ جان گئے کہ وہ کون ہیں؟اور میں زندگی کے کھیل کا زہین کھلاڑی ہوں

شکست کا نام زندگی نہیں ہے ،فتح کا نام زندگی نہیں ،شکست و فتح ،ہار یا جیت سے کوئی فرق نہیں پڑتا

ہار جیت سے کامیابی نہیں ملتی ،ہار جیت کا انجام دکھ کے سوا کچھ نہیں انسان جب خود کو جان جاتا ہے تو وہ کائنات ہوجاتا ہے ،ایسے انسان کو پھر خوشیوں کے پیچھے بھاگنا نہیں پڑتا بلکہ خوشیاں خود چل کر اس کے پاس آتی ہیں۔

میرا صرف ایک مقصد ہے کہ مجھے زندگی کے اس کھیل میں خود کو اس قابل بنانا ہے کہ کائنات کی جتنی بھی خوشیاں اور جشن ہیں وہ خود چل کر میرے پاس آئیں

میرے ساتھ جو بھی انسان اٹیچڈ ہیں ،میرے سارے میرے جتنے بھی یا دوست ،رشتہ دار ،ماں باپ ،بہن بھائی ہیں ،میں ان سب سے پیار کرتا ہوں ،ان سب کا شکریہ ادا کرتا ہوں۔
آج جو کچھ بھی یرے پاس ہے۔
ان سب کے لئے میں اپنے پورے دل سے کائنات،فطرت اور خدا کا شکر گزار ہوں

میں نامکمل نہیں ،میں مکمل ہو ،مجھ میں کوئی کمی نہیں ہے ،مجھے خود پر یقین ہے ،مجھے خود پر مکمل بھروسہ ہے کہ ایک دن میں اس دنیا کو اپنے دلکش خیالات کی خوشبو سے بدل دوں گا

دنیا کے کسی بھی انسان میں کوئی کمی نہین ہے،جس دن انسان کو اپنی قابلیت پر پورا بھروسہ آجائے گا اور اس سے سارے خوف نکل جائیں گے تب وہ مکمل آزاد ہوجائے گا ،آزاد انسان ہی جانتا ہے کہ وہ کون ہے ؟

آزاد انسان ہی خود کو جانتا ہے ،جو آزاد ہوگیا وہ جان گیا کہ ساری کائنات ،کائنات کی ساری طاقتیں اس کے اندر ہی ہیں اور انسان کے پاس صرف آسمان پر اڑنے کی قابلت نہیں تمام کائنات کو جاننے کی قابلیت ہے

زندگی کو دیکھنا ہے،سمجھنا ہے ،جاننا ہے تو معصوم بچوں کی شراتوں میں دیکھیں ،معصوم بچے کی مسکراہٹ میں رقص کررہی ہے زندگی۔ معصوم بچوں کے کھیل میں مستیاں بکھیر رہی ہے زندگی ،معصوم بچے کی اداوں میں قہقہے لگارہی ہے زندگی اب چاہے کچھ بھی ہوجائے مجھے خود کو جاننے سے دنیا کی کوئی طاقت نہیں روک سکتی
میرے لئے کچھ بھی ناممکن نہیں ہے
سب کچھ ممکن ہے

جو بھی میں سوچ سکتا ہوں وہ سب کچھ میں کر سکتا ہوں۔


شیئر کریں: