حکومت سازی پر پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن میں اتفاق

حکومت سازی پر پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن میں اتفاق

عام انتخابات میں‌کوئی بھی جماعت سادہ اکثریت حاصل کرنے میں ناکام رہی ہے. حکومت سازی کے لیے سیاسی جماعتوں کے
درمیان جوڑ توڑ کا سلسلہ زور پکڑتا جارہا ہے. اس سلسلے میں پاکستان پیپلز پارٹی اور پاکستان مسلم لیگ ن کی قیادت کے درمیان مذاکرات
کا دوسرا دور لاہور میں ہوا.

حکومت سازی پر پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ ن میں اتفاق
سابق صدر مملکت اور پی پی پی پی کے صدر آصف علی زرداری، چیئرمین پی پی پی بلاول بھٹو زرداری سے سابق وزیراعظم محمد شہباز
شریف نے بلاول ہاؤس لاہور میں ملاقات کی. اس اہم ملاقات میں مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی میں سیاسی تعاون پر اصولی
اتفاق رائے کرلیا گیا ہے.
مشترکہ اعلامیہ کے مطابق ملاقات میں ملک کی مجموعی صورت حال اور مستقبل میں سیاسی تعاون پر تفصیلی بات چیت کی گئی. قائدین
نے ملک کو سیاسی استحکام سے ہم کنار کرنے کے لئے سیاسی تعاون کرنے پر اتفاق کیا.
دونوں جماعتوں کے قائدین نے سیاسی عدم استحکام سے ملک کو بچانے پر اصولی اتفاق کیا. قائدین کا کہنا تھا عوام کی اکثریت نے
ہمیں مینڈیٹ دیا ہے ہم عوام کو مایوس نہیں کریں گے.
دوسری جانب شہباز شریف نے ایک بار پھر مولانا فضل الرحمان سے رابطہ کیا ہے. شہباز شریف نے مرکز میں حکومت سازی سے
متعلق مولانا فضل الرحمان کو اعتماد میں لیا. مولانا فضل الرحمان نے انتخابات کے نتائج پر تحفظات کا اظہار کیا. مولانا نے مجلس عاملہ اور
امراء اجلاس میں مشاورت کا وقت مانگ لیا.