حماس اسرائیل لڑائی میں اموات تقریبا 3500 ہو گئیں

7 اکتوبر ہفتہ کی صبح ساڑھے بجے اچانک ًاس کی جانب سے اسرائیل پر فضائی،زمینی اور بحری حملوں کے
بعد سے اسرائیلی فوجی اور شہریوں کی اموات ایک ہزار سے بڑھ چکی ہے. ان میں 169 فوجی ہیں.
اسی طرح اسرائیل کی کارروائیوں میں 770 فلسطینی شہید اور ہزاروں زخمی ہو گئے ہیں. اسرائیل نے دعوی
کیا ہے کہ صیہونی سرزمین پر تقریبا ڈیڑھ ہزار حماس کے جنگجوؤں کی لاشیں پڑی ہیں.
بین الاقوامی میڈیا کے مطابق مجموعی طور پر 3 ہزار 500 کے قریب لوگ مارے جا چکے ہیں. اسرائیل میں
حملے کے پانچویں روز بھی خوف کی فضا ہے.

حماس 150 اسرائیلی قیدیوں کو قتل کرے گا؟

حماس حملوں میں‌ مقبوضہ صیہونی زمین پر غیر ملکی بھی مارے گئے ہیں. ان میں امریکا، برازیل، کولمبیا،
کینیڈا، آئرلینڈ، میکسیکو، نیپال، پاناما، پیراگوئے، روس، سری لنکا، تھائی لینڈ اور یوکرین بھی شامل ہے.
اسرائیل سے اظہار یکجہتی کے لیے امریکی وزیر خارجہ انٹونی بلنکن آج تل ابیب کا دورہ کر رہے ہیں. اس
دورے کے ذریعے وہ حماس، حزب اللہ اور ایران کو پیغام دینا چاہتے ہیں کہ اسرائیل تنہا نہیں امریکا اس کے
ساتھ کھڑا ہے.

اسرائیل کی مزمت نہیں کریں گے بس امداد لے لو

اسی طرح امریکا کے اہم اتحادیوں برطانیہ، فرانس، جرمنی اور اٹلی نے بھی اسرائیل کی کھل کے حمایت
اور حماس کی مخالف کی ہے. اس کے برخلاف کسی بھی عرب ممالک سے اسرائیلی مظالم کی مزمت میں
ایک آواز نہیں اٹھی الٹا بعض ممالک نے حماس کے حملوں کی مخالفت کی ہے.