بیشتر مسلمان ممالک میں عید پر کرفیو، پاکستان ایران میں آزادی

شیئر کریں:

کورونا کا پھیلاؤ روکنے کے لئے سعودی عرب سمیت متحدہ عرب امارات، کویت، قطر،
مصر، عراق اور شام میں عید کے اجتماعات نہیں ہوں گے۔
ابھی تک صرف ایران اور پاکستان کی جانب سے مساجد میں عید کے اجتماعات کا اعلان سامنے آیا ہے۔
سعودی عرب میں لاک ڈاؤن اور کرفیو کے باعث نماز عید کے اجتماعات بھی نہیں ہو رہے ہیں۔
فجر کی نماز کے آدھے گھنٹے بعد عید کا خطبہ اسپیکر کے زریعے عوام کو گھروں میں سنایا جائے گا۔
عید تکبیرات اسپیکر کے ذریعہ طلوع آفتاب تک عوام کو سنائی جائی گی۔

مسجد الحرم اور مسجدی نبوی میں میں صرف آئمہ اور خادمین نماز پڑھیں گے۔
سعودی عرب میں عید کی تعطیلات کے دوران 23 سے 27 مئی تک کرفیو نافذ رہے گا۔

سعودی عرب میں عید پر بھی کرفیو ہو گا

اسی طرح متحدہ عرب امارات، کویت، قطر، مصر، شام، الجزائر اور عمان میں بھی عید کے بڑے بڑے اجتماعات نہیں ہورہے۔
عوام کو گھروں تک محدود رکھنے کے لئے عید کی چھٹیوں کے دوران کرفیو کا دور دورہ ہو گا۔
ترکی میں عید پر 23 سے 26 مئی تک ملک گیر کرفیو لگا رہے گا۔

مصر میں بھی 24 مئی سے چھ دن کے لئے کرفیو لگایا گیا ہے۔

عراق کی حکومت نے اتوار سے جمعرات تک عیدالفطر کی تعطیلات کے دوران ملک بھر میں کرفیو کا اعلان کیا ہے۔
کورونا وائرس کے باعث شام نے نمازِ عید الفطر کے اجتماعات پر مکمل پابندی عائد کر دی ہے۔
عوام سے عید کی نماز گھروں پر ہی ادا کرنے کی اپیل کی گئی ہے۔
عرب ممالک کے برعکس ایران میں عید کے اجتماعات مساجد ہی میں ہوں گے۔
اسی طرح پاکستان میں بھی حکومت نے لاک ڈاؤن ہٹا کر عوام کو آزاد چھوڑ دیا ہے۔
علمائے کرام اور حکومت کی جانب سے بھی نماز کے اجتماعات پر عوام کو اکسایا جارہا ہے۔
ڈاکٹرز نے عوام کے بھڑتے ہوئے میل میلاپ پر تشویش ظاہر کی ہے۔

کیونکہ کورونا سے بچاو صرف اور صرف سماجی فاصلے ہی سے ممکن ہے
لیکن اس کے برخلاف پاکستان کی مساجد میں نمازوں کے اجتماعات ہو رہے ہیں۔
مذہبی رہنما اور تحریک انصاف کے رہنما عید کی نمازوں اور بڑی رات پر
مساجد میں عبادت کی اجازت دینے کا مطالبہ کرتے رہے ہیں۔


شیئر کریں: