بغیر اجازت دوسروں کی تصاویر لینے پر لاکھوں روپے جرمانہ 6 ماہ قید

شیئر کریں:

دوسروں کی بغیر اجازت تصاویر لینے والوں کے خلاف حکومت میدان میں آگئی۔
بلااجازت تصویر بنانے والوں کے لیے متحدہ عرب امارات حکومت نے نیا قانون منظور کر لیا۔
نئے قوانین کے تحت اگر کوئی شخص کسی بھی شہری کی بغیر اجازت تصویر لیتا ہے تو اسے
5 لاکھ درہم تک جرمانہ ہوگا۔

یو اے ای کی حکومت کی طرف سے کہا گیا ہے کہ کسی کی ذاتی زندگی کی سوشل میڈیا پر
تشہیر کرنے والے والے کو جرمانے کے ساتھ ساتھ 6 ماہ تک قید کا سامنا بھی کرنا پڑ سکتا ہے۔

حکومت کا کہنا ہے متحدہ عرب امارات کے آئین کے آرٹیکل 21 کے تحت کسی دوسرے شہری
کی اجازت کے بغیر اس کئی ریکارڈنگ کرنا، تصویر بنانا اور اس کی سوشل میڈیا پر تشہیر
ناقابل معافی جرم ہے۔

ذاتی زندگی کو سوشل میڈیا پر نشر کرنے والے کو 2 لاکھ 50 ہزار سے 5 لاکھ درہم تک جرمانہ ہو گا۔
عدالت کو اختیار حاصل ہوگا کہ وہ مجرم کو 6 ماہ کے لیے جیل بھی بھیج سکتی ہے۔
یاد رہے عوامی مقامات پر لوگ اکثر بغیر اجازت موبائل سے دوسرے شہریوں کی ویڈیوز اور تصاویر لیتے رہتے ہیں
متحدہ عرب امارت کی حکومت نے شہریوں کی شکایات کے بعد سخت قوانین متعارف کروائے ہیں۔


شیئر کریں: