ایران میں پنجاب کے 9 مزور قتل 3 زخمی

ایران میں پنجاب کے 9 مزور قتل 3 زخمی

پاکستان ایران تعلقات ایک بار پھر سے خراب کرنے کی سازش کی ہے. ایران کے صوبہ سیستان و بلوچستان
کے شہر سراوان میں نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے 9 مزدوروں کو قتل اور 3 کو شدید زخمی کردیا.
ذرائع کے مطابق مسلح افراد نے کوارٹر کے مختلف کمروں میں سوئے ہوئے مزدوروں کو اکٹھا کرکے قتل کیا.
جاں بحق افراد کا تعلق پاکستان کے صوبہ پنجاب سے تھا. تمام افراد گزشتہ 8 -10 برس سے ایران میں محنت
مزدوری کر رہے تھے.
جاں بحق اور زخمی ایران میں گاڑیوں کی ڈینٹنگ پینٹنگ کا کام کرتے تھے. جاں بحق افراد میں سے 5 کا
تعلق صوبہ پنجاب کے علاقہ علی پور سے تھا. 2 کا لودھراں کے علاقے گیلے وال سے تھا.
مقتول زبیر کے بھائی محسن کے مطابق بھائی اور بھانجا کئی برس سے بغیر ویزے کے بارڈر کراس کرکے ایران
کے علاقے سراوان آتے جاتے تھے۔ انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ بھائی اور بھانجے کی لاشیں
فوری طور پر ہمارے گھر پہنچائی جائیں.
خیال رہے پاکستان کے‌صوبہ خیبرپختونخوا کے علاقے وزیرستان میں‌ بھی پچھلے دنوں‌بالکل اسی طرح سوئے ہوئے
پنجاب سے تعلق رکھنے والے 6 افراد قتل کر دیے گئے. ماضی میں تواتر کے ساتھ پنجابی مزدوروں کو نشانا بنایا
جاتا رہا ہے.
دفتر خارجہ نے واقعہ پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ واقعہ پاکستان اور ایران کے تعلقات خراب کرنے کی
گہری سازش ہو سکتی ہے.