انضمام الحق اہم زمہ داروں سے مستعفی ہو گئے

پاکستان کرکٹ ٹیم کے چیف سلیکٹر انضمام الحق نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا ہے۔ ایک ٹی وی چینل کو
ٹیلی فونک انٹرویو میں سابق کپتان نے کہا مفادات کے ٹکراؤ کے الزام میں کوئی سچائی نہیں ہے۔ لوگ بغیرتحقیق
کے باتیں کرتے ہیں مجھ پر سوال اٹھائے گئے تو میں استعفیٰ دینا ہی بہترسمجھا.
انضمام نے کہا پاکستان کرکٹ بورڈ انکوائری کرے میں دستیاب ہوں، بغیر تحقیق کے باتیں کرنے والے ثبوت دیں۔
انضمام الحق نے پلیئرز ایجنٹ کمپنی سے تعلق سے متعلق خبر پر کہا ان کا کسی قسم کا تعلق نہیں، الزامات لگنے پر
بورڈ سے کہا کوئی شک ہے توانکوائری کرلیں.

بنگلہ دیش کے خلاف پاکستان ٹیم میں بڑی تبدیلیاں

پاکستان کرکٹ بورڈ نے انضمام الحق پر الزامات کی تحقیقات کے لیے پانچ رکنی کمیٹی بنا دی ہے. انضمام الحق کو رواں
برس 7 اگست کو چیف سلیکٹربنایا گیا تھا۔ اس سے قبل اگست 2016 سے جولائی 2019 تک بھی قومی سلیکشن کمیٹی
کے سربراہ کی حیثیت سے خدمات انجام دے چکے ہیں.
بعض ناقدین کا کہنا ہے کہ انضمام الحق نے کرکٹ ورلڈکپ میں ٹیم کی بدترین ناکامی پر خاموشی اختیار کیے رکھی
اور کمپنی سے متعلق قیاس آرائیوں کا موقع غنیمت جانتے ہی انہوں نے راہ فرار اختیار کی.