امریکا میں لاک ڈاؤن مخالف مظاہرے،ٹرمپ کی حمایت و مخالفت بھی

شیئر کریں:

امریکا کی ریاست مشی گن، اوہائیو ، شمالی کیرولائنا، منیسوٹا ، یوٹاہ، ورجینیا اور کینٹکی میں لاک ڈاؤن کے خاتمے کے لیے شہری سڑکوں پر نکل آئے ہیں۔
مظاہرین نے مطالبہ کیا ہے کہ فوری طور پر لاک ڈاؤن کا خاتمہ کیا جائے۔

امریکا میں کورونا کی وبا کے باعث لاک ڈاؤن نے تقریبا ڈھائی کروڑ لوگوں کو بے روزگار کر دیا ہے۔
صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے جن ریاستوں کا ٹویٹس میں حوالہ دیا ان کی قیادت ڈیموکریٹس کر رہے ہیں۔
اوہائیو اور یوٹاہ ری پبلیکن گورنر ہیں، وہاں بھی احتجاج ہوا لیکن ٹرمپ نے ان کا ذکر تک نہیں کیا۔
ٹرمپ مظاہرین کی حمایت میں بولے کہ احتجاج کے دوران سوشل ڈسٹسنگ پر عمل کیا گیا مگر حقیت اس کے برعکس تھی۔
امریکی صدر نے ڈیموکریٹس کے گورنر کو نشانے پر رکھا، منی سوٹا، مشی گن اور ورجینیا کے عوام سے اپیل کر ڈالی وہ آزادی کے لیے آگے بڑھیں۔
وائٹ ہاؤس کی کورونا وائرس ٹاسک فورس سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر انتھونی فوکی نے خبردار کیا کہ پابندیوں میں نرمی لاتے ہوئے ٹھوس اقدامات اٹھانا ہوں گے۔
‌متنبہ کیا کہ بہتر حکمت عملی نہ اپنائی تو کورونا وائرس دوبارہ سر اُٹھا سکتا ہے۔
امریکا کی پچاس ریاستوں میں کورونا وائرس کی وبا سے اب تک 37 ہزار 158 افراد ہلاک اور 7 لاکھ 10 ہزار سے زائد متاثر ہو چکے ہیں۔
امریکا بھر میں 35 لاکھ سے زائد شہریوں کے ٹیسٹ بھی کیے گئے ہیں۔


شیئر کریں: