افغانستان کا قومی فٹبالر بھی ملک سے فرار کی کوشش میں مارا گیا

شیئر کریں:

افغانستان کے دارلحکومت پر کابل کے قبضہ اور صدر اشرف غنی کے فرار کے بعد بیشتر افغانوں نے بھی
ملک سے باہر نکلنے کی کوششیں کیں۔ اسی کوشش میں قومی فٹبالر ذکی انوری بھی مارا گیا۔

افغان حکام نے تصدیق کی ہے کہ ملک سے فرار کی کوشش میں جہاز سے گرکے ہلاک ہونے میں
ذکی انوری بھی شامل تھا۔ ذکی انوری افغانستان کی جانب سے فٹبال کھیلتا رہا تھا اور وہ ایک
بہترین کھلاڑٰی مانا جاتا تھا۔

طالبان نے خواتین پر پابندیاں نہ لگانے کا اعلان کر دیا برقعہ بھی ضروری نہیں

یاد رہے طالبان کے صدارتی محل میں داخل ہونے کے بعد امریکا کا طیارہ اپنے شہریوں کو لینے کابل
ائیرپورٹ پر آیا تو بڑی تعداد میں لوگ رن وے پر پہنچ گئے اور جہاز پر سوار ہونے کی کوشش
میں اس کے پروں تک پر لٹک گئے۔

ائیرپورٹ کے رن پر جہاز کے ساتھ ساتھ بڑی تعداد میں لوگ بھی دوڑتے رہے اور جیسے ہی جہاز فضا
میں بلند ہوا تو اس کے پروں پر سوار تین افراد نیچے آگرے۔ انہی میں ایک ذکی انوری بھی تھا۔

افغانستان کے امن میں ایران کا کردار

افغان شہری طالبان کے 1990 کے مظالم زہن میں رکھتے ہوئے ملک چھوڑنا چاہتے تھے کیونکہ پچھلے دور
حکومت میں مظالم کی انتہا ہو چکی تھی۔ بہرحال اس مرتبہ طالبان بہت تبدیل ہیں اور زندگی کے
مختلف شعبوں سے وابستہ لوگوں کو ساتھ لے کر چلنا چاہتے ہیں۔


شیئر کریں: