اسلام آباد کا پمز اسپتال کورونا زدہ ہو گیا مزید 60 ڈاکٹرز شکار ہو گئے

کرونا وائرس
شیئر کریں:

اسلام آباد سے ایم اے چوہان
پاکستان میں کورونا وائرس نے پھر سے لوگوں کو اپنی لپیٹ میں لینا شروع کر دیا ہے۔
کورونا وائرس کی ابھی پہلی لہر تھمی نہ تھی کہ دوسری مہلک لہر جکڑنے لگی ہے۔
ملک کا کوئی شہر اس کے وار سے محفوظ نہیں اور اسپتال کا عملہ بھی بیمار پڑنے لگا ہے۔
کورونا کی پہلی لہر میں جس طرح پمز اسپتال کے ڈاکٹرز اور عملہ جس طرح متاثر ہو رہا تھا اب
پھر سے وہ سب سے زیادہ متاثر ہو رہے ہیں۔
پمز اسپتال میں مختلف شعبوں کے 61 ڈاکٹرز پر کورونا وائرس حملہ کر چکا ہے۔
ذرائع کا کہنا ہے صرف جنرل سرجری کے 9 ڈاکٹر کورونا کا شکار چکے ہے۔

پمز اسپتال کے 30 ملازمین کورونا کا شکار ہو گئے

پیٹ کے بیماریوں کے شعبے کے 6 اور شعبہ آرتھوپیڈک کے دو ڈاکٹرز کوڈ 19 سے متاثر ہوئے۔
اسی طرح شعبہ امراض قلب کے 5 ڈاکٹرز اور بچوں کے 7 ڈاکٹرز کورونا کا شکار ہوئے۔
یہی نہیں بلکہ پمز اسپتال کے کینسر وارڈ اور میڈیسن ٹیم کے ڈاکٹرز بھی قرنطینہ کر چکے ہیں۔
خیال رہے پہلی لہر میں بھی پمز اسپتال کے کئی شعبہ کورونا وائر کی وجہ سے سیل کرنے پڑ گئے تھے۔
اسلام آباد میں سب سے زیادہ دباؤ بھی اسی اسپتال پر پڑتا ہے۔


شیئر کریں: