اسلامیہ کالج خالی کروانےکی کوشش،طلبہ سے جھڑپ

شیئر کریں:

کراچی میں پولیس کی عدالتی حکم پر اسلامیہ کالج کی عمارت خالی کرانے کی کارروائی۔ طلبہ سے جھڑپ ہوگئی۔ طلبہ کا پتھراو۔ پولیس نے آنسو گیس کا استعما ل کیا اور متعدد طلبہ کو حراست میں لے لیا ۔ کالج پرنسپل کا کہنا ہے پولیس نے اچانک گھیراو کرلیا۔ کالج کو تاحال عمارت خالی کرنے کا عدالتی نوٹس نہیں ملا۔کراچی میں پولیس کی بھاری نفری اسلامیہ کالج کی عمارت خالی کرانے پہنچی،، تو وہاں موجود طلبہ راہ میں رکاوٹ بن گئے۔ طلبہ کی جانب سے پولیس اہلکارو ں پر پتھراو کیا گیا۔ جواب میں پولیس ایکشن میں آئی۔ احتجاجی طلبہ پر آنسو گیس کا استعمال کیا۔ اس موقع پر آنسو گیس کے شیل سے ہر طرف دھواں پھیل گیا،،ا ور طلبہ پیچھے ہٹ گئے۔ کچھ دیر بعد طلبہ کچھ فاصلے اکٹھے ہوگئے اور پولیس پر پتھراو جار ی رکھا۔ بعد میں پولیس اہلکار اسلامیہ کالج کی عمارت میں داخل ہوگئے۔ کالج پرنسپل علی راس نے میڈیا سے گفتگو میں بتایا کہ اس عمارت میں دوکالج اور تین اسکول قائم ہیں،، جن میں دس ہزار طلباء زیر تعلیم ہیں۔ آج پولیس نے اچانک کالج کا گھیراؤ کرلیا۔ انہیں نکالنے کی کوشش پر طلبہ مشتعل ہوگئے۔ عمارت کے حوالے سے کیس عدالت میں چل رہا ہے لیکن کالج انتظامیہ کو تاحال عدالت کا کوئی نوٹس موصول نہیں ہوا۔۔۔


شیئر کریں: