ادویات کی قیمتوں میں اضافہ اور عوام کو پریشان کرکے کمپنیز کا منافع 70 فیصد بڑھ گیا

شیئر کریں:

ادویات کی قیمتوں میں اضافے سے عوام تو پریشان ہیں لیکن پاکستان میں ادویات بنانے والی کمپنیوں
کے منافح میں اوسطا 69 فیصد اضافہ ہو گیا۔
ٹاپ لائن سیکورٹیز کی رپورٹ کے مطابق سال 2020 کی پہلی ششماہی کے دوران اسٹاک ایکس چینج
میں رجسٹر پاکستان میں کام کرنے والی پانچ بڑی فارماسیوٹیکل کمپنیوں کو مجموعی طور پر 6 ارب
21 کروڑ 70 لاکھ روپے کا خالص منافع ہوا۔

کمپنیوں کا حاصؒ ہونے والا منافع گزشتہ سال 2019 کی پہلی ششماہی کے مجموعی منافع
سے 69 فیصد زیادہ ہے۔
6 ماہ کے دوران ان کمپنیوں کی ادویات کی فروخت میں گزشتہ سال کے مقابلے میں صرف 4 فیصد
ہی اضافہ رکارڈ کیا گیا۔
رپورٹ کے مطابق کورونا کے باعث زیادہ تر اسپتال معمول کے مریضوں کے لیے بند ہونے کی وجہ
سے اس دوران روایتی ادویات کی فروخت میں تو پہلے کے مقابلے میں کم رہی لیکن وٹامنز اور
دوسرے سپلیمنٹس کی فروخت میں نمایاں اضافہ دیکھا گیا۔

رپورٹ کے سیلز کے اعتبار سے سب سے بڑی کمپنی کے منافع میں تو 319 فیصد اضافہ رکارڈ کیا گیا۔


شیئر کریں: