آرمی ایکٹ ترمیمی بل منظور

شیئر کریں:

قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق بل متفقہ طور پر منظور کر لیا۔
وزیر دفاع پرویز خٹک کہتے ہیں کہ پورا پاکستان اور تمام سیاسی جماعتیں پاک فوج کے ساتھ کھڑی ہیں۔
فروغ نسیم بولے پیپلزپارٹی کے رکن کمیٹی نے ایک ترمیم پیش کرنی چاہی جس کا جواب کمیٹی نے دے دیا ہے۔
چیئرمین کمیٹی امجد علی خان کی زیر صدارت قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے دفاع کا ان کیمرا اجلاس ہوا۔
جس میں آرمی ایکٹ ترمیمی بل 2020 کے مسودے پر غور کیا گیا۔
اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر دفاع پرویز خٹک نے بتایا کہ کمیٹی اجلاس میں سروسز ایکٹ ترمیمی بلز متفقہ طور پر منظور کر لئے گئے ہیں۔
https://www.khabarwalay.com/2020/01/06/14220/
انہوں نے بلز کی منظوری پر قوم کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ پورا پاکستان اورتمام جماعتیں پاک فوج کے ساتھ کھڑی ہیں۔
وزیر قانون فروغ نسیم نے کہا کہ کمیٹی نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق بل متفقہ طور پر منظور کر لیا ہے۔
پیپلزپارٹی کے رکن کمیٹی نے ایک ترمیم پیش کرنی چاہی جس کا جواب کمیٹی نے دے دیا ہے۔
رکن قومی اسمبلی رمیش کمار کا کہنا تھا کہ پیپلزپارٹی سمیت کسی بھی جماعت نے پاک آرمی، ایئرفورس اور نیوی کے تینوں ایکٹس میں کوئی ترمیم پیش نہیں کی۔
آرمی ایکٹ ترمیمی بل اور دیگر بل کل قومی اسمبلی میں پیش کئے جائیں گے۔
اجلاس میں وزیر دفاع پرویز خٹک ، رمیش کمار ، وزیر قانون فروغ نسیم، پارلیمانی سکریٹری ملیکہ بخاری اور حکومتی ارکان نے شرکت کی۔ پیپلزپارٹی کے آفتاب شعبان میرانی، عامر مگسی ، خورشید جونیجو سمیت ن لیگ کے ارکان نے بھی شرکت کی۔
https://www.khabarwalay.com/2020/01/04/14160/


شیئر کریں: