February 13, 2020 at 4:32 pm

کراچی میں گزشتہ روز گلشن اقبال میں کچرہ کنڈی سے ذکیہ نامی خاتون کی لاش ملی
ایس ایس پی ایسٹ کا کہناہے کہ محبوب نے ابتدائی بیان میں بتایا کہ ذکیہ کا دس سال قبل انتقال ہوگیا تھا
اور ذکیہ کی لاش کو ان کی بیٹی اور بیٹے نے دفن نہیں کیا
ذکیہ کے بیٹے اور بیٹی نے لاش فریزر میں رکھی تھی
کراچی میں گزشتہ رات گلشن اقبال بلاک 11 کریسنٹ اپاٹمنٹ کے قریب نیپا انسٹیوٹ کی دیوار کے پاس خاتون کی پرانی لاش ملی
لاش کی شناخت ذکیہ خاتون کی نام سے ہوئی ہے ایس ایس پی ایسٹ تنویر عالم اوڈھو کا کہناہے کہ لاش کا پوسٹ مارٹم ہوچکا ہے.
رپورٹ کا انتظار ہے ذکیہ کی لاش کچرا کنڈی میں اس کا بھائی محبوب نے پھینکی اور یونین والوں نے لاش کو پھینکتا دیکھ کر پولیس کو اطلاع دی جس پر محبوب کو حراست میں لے لیا گیاہے ۔
ابتدائی بیان میں محبو ب نے بتایاکہ ذکیہ کے بیٹے اور بیٹی کا بھی انتقال ہوچکا ہے
دونوں کے انتقال کے بعد میں نے لاش کو سنبھال کر رکھا گذشتہ دنوں زیادہ بدبو پھیلی تو لاش پھینک دی
پولیس حکام کہناہے کہ محبوب کے بیان کی تصدیق کی جارہی ہے

Facebook Comments