February 12, 2020 at 10:47 pm

تحریک انصاف کا انصاف پھر سامنے آگیا، عوام کو ریلیف دینے کی بات آئی تو صرف 10 ارب روپے دینے کا فیصلہ ہو سکا۔
لیکن جب رقم وصول کرنے کی بات ہوئی تو حکومت نے ایک سال میں عوام کی جیبوں سے 600 ارب روپے اضافی نکلوا لیے۔

صارفین کواربوں روپے کے اضافی بل بھیجنے کا انکشاف


تحریک انصاف کی حکومت نے عوام سے بجلی کی قیمت ایک مرتبہ وصول کرنے کے بعد ایک سال کے دوران مجموعی طور پر مزید 600 ارب روپے اضافی بھی وصول کیے۔
یہ انکشاف نیپرا کی فیول ایڈجسٹمنت کی مد میں بجلی کی قیمت میں اضافہ کی درخواست پرسماعت کے دوران ہوا۔
رپورٹ کے مطابق نیپرا کے ممبر ٹیرف نے اس بات کی تصدیق کی کہ گزشتہ ایک سال کے دوران بجلی کے ٹیرف میں مختلف اوقات میں فیول پرائس اور دوسری ایڈ جسٹ منٹس کے ذریعے صارفین سے مجموعی طور پر پانچ سے چھ سو ارب روپے وصول کیے گئے۔

آئی ایم ایف کے اہداف میں ناکامی پر بجلی مہنگی، عوام سزا بھگتیں گے


پی ٹی آئی کے دور حکومت میں اب تک صرف فیول ایڈجسمنٹ کی مد میں حکومت نے 11 مرتبہ بجلی کی قیمت بڑھائی اور 3 مرتبہ معمولی کمی کی۔ سولہ ماہ میں بجلی کی قیمت میں صرف 48 پیسے فی یونٹ کمی کی گئی۔
مجموعی طور پر 9 روپے 45 پیسے فی یونٹ بجلی مہنگی کی گئی۔

Facebook Comments